ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

نیپال میں شدید بارش کے سبب بہار میں سیلاب کا قہر ، لاکھوں لوگ ہوئے بے گھر

سیلاب متاثرہ ضلع کے لوگوں کا آشیانہ ان کی آنکھوں کے سامنے پانی میں ڈوب گیا ہے ، تو راحت رسانی کے نام پر ضلع انتظامیہ محض بیانات دیکر ہی اپنی ذمہ داری پوری کر لے رہے ہیں ۔

  • Share this:
نیپال میں شدید بارش کے سبب بہار میں سیلاب کا قہر ، لاکھوں لوگ ہوئے بے گھر
سیلاب متاثرہ ضلع کے لوگوں کا آشیانہ ان کی آنکھوں کے سامنے پانی میں ڈوب گیا ہے ، تو راحت رسانی کے نام پر ضلع انتظامیہ محض بیانات دیکر ہی اپنی ذمہ داری پوری کر لے رہے ہیں ۔

بہار کے دونوں چمپارن یعنی مغربی اور مشرقی چمپارن کے گاؤں کی حالت کو سیلاب نے خراب کر دیا ہے۔ بابائے قوم مہاتما گاندھی کا میدان عمل رہا موتیہاری بری طرح سے سیلاب کی زد میں ہے۔ خاص طور سے مسلم اکثریتی اسمبلی حلقہ نرکٹیا کی صورت حال مزید خراب ہوگئی ہے۔ زراعت پیشہ موتیہاری ضلع کے لوگوں کی کھیتی کو سیلاب نے تباہ کر دیا ہے ۔ ادھر لاک ڈاون اور کورونا کے سبب دہلی ، پنجاب ، ممبئی ، ہریانہ اور کولکاتہ سے بڑی تعداد میں لوٹے مزدوروں کا کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔


بڑی آبادی کے ہاتھ میں روزگار نہیں ہے اور رہی سہی کسر سیلاب نے پوری کر دی ہے۔ کھیتی برباد ہونے سے مزدوروں کی حالت اور بھی خراب ہوگئی ہے ۔ گھر میں دال روٹی کا انتظام کرنا ان کے لئے اب پہاڑ بن رہا ہے۔ سب سے زیادہ مسئلہ پینے کے پانی اور علاج سے جڑا ہے ۔ ریاستی حکومت کا صحت کا شعبہ پوری طرح سے زمین دوز ہوگیا ہے۔ ضلع کے اسپتال اور پرائمری صحت کے مراکز پر علاج کے نام پر خانہ پری ہورہی ہے ۔


بڑی آبادی کے ہاتھ میں روزگار نہیں ہے اور رہی سہی کسر سیلاب نے پوری کر دی ہے۔
بڑی آبادی کے ہاتھ میں روزگار نہیں ہے اور رہی سہی کسر سیلاب نے پوری کر دی ہے۔


سیلاب متاثرہ ضلع کے لوگوں کا آشیانہ ان کی آنکھوں کے سامنے پانی میں ڈوب گیا ہے ، تو راحت رسانی کے نام پر ضلع انتظامیہ محض بیانات دیکر ہی اپنی ذمہ داری پوری کر لے رہے ہیں ۔ سوال ہے کہ لوگوں کا علاج کیسے ہوگا ، جن گاؤں میں پانی داخل ہوگیا ہے ان کے درمیان راحتی اشیا کی تقسیم کیسے کی جائےگی اس پر کوئی بات نہیں ہورہی ہے ۔

این ڈی آر ایف اور ایس ڈی آر ایف کی ٹیم سیلاب زدہ علاقوں میں لوگوں کو بچانے کے لئے کام کرنے لگی ہے ۔ ادھر وزیر اعلیٰ نتیش کمار سیلاب متاثرین کو ہر ممکن مدد کرنے کا بھروسہ دلایا ہے ۔ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ وزیر اعلیٰ کے بھروسہ دلانے کا کوئی فائدہ متاثرین کو ہوتا بھی یا نہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 23, 2020 08:37 PM IST