اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سخت سیکورٹی کے درمیان مغربی بنگال میں آخری مرحلے کے لئے ڈالے جا رہے ہیں ووٹ

    کولکتہ۔ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے چھٹے اور آخری مرحلے کے انتخابات کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    کولکتہ۔ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے چھٹے اور آخری مرحلے کے انتخابات کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    کولکتہ۔ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے چھٹے اور آخری مرحلے کے انتخابات کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔

    • Share this:
      کولکتہ۔ مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے چھٹے اور آخری مرحلے کے انتخابات کے لئے آج ووٹ ڈالے جا رہے ہیں۔ آخری مرحلے میں دو اضلاع مشرقی مدناپور اور کوچ بہار کی 25 سیٹوں پر ووٹنگ ہو رہی ہے۔ ان اضلاع میں سیکورٹی کے پختہ انتظامات کئے گئے ہیں اور یہاں چپے چپے پر ہزاروں سیکورٹی تعینات ہیں۔ صبح سات بجے سے شام چھ بجے تک 6774 پولنگ مراکز پر ہونے والی پولنگ میں 58 لاکھ سے زیادہ ووٹر اپنے ووٹ کے حق کا استعمال کریں گے۔

      چھٹے اور آخری مرحلے کے انتخابات کے لئے 18 خواتین سمیت کل 170 امیدوار انتخابی میدان میں ہیں۔ آخری مرحلے میں آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کو یقینی بنانے کے لئے مرکزی فورسز کی 361 کمپنیوں سمیت تقریبا 50 ہزار سیکورٹی تعینات کئے گئے ہیں۔ الیکشن کمیشن کے حکام نے کہا کہ مرکزی فورسز کی 123 کمپنیاں كوچ بہار ضلع میں تعینات ہیں جبکہ دیگر 238 کمپنیاں مشرقی مدناپور ضلع میں تعینات ہیں۔

      كوچ بہار ضلع میں مرکزی فورسز کی مدد کے لئے ریاستی پولیس کے 4500 جوانوں کا دستہ تعینات کیا گیا ہے۔ مشرقی مدناپور ضلع میں 7500 جوان تعینات کئے گئے ہیں۔ مرکزی فورسز کی باقی جو تقریبا 310 کمپنیاں ابتدائی مراحل کے لئے مغربی بنگال میں تعینات تھیں، انہیں تمل ناڈو اور کیرالہ میں بھیجا گیا ہے۔ ان دونوں ریاستوں میں انتخابات ہونے ہیں۔

      حکام نے کہا کہ چونکہ آخری مرحلے کے تحت انتخابی عمل میں شامل ہو رہے یہ دونوں ضلع آسام اور اڑیسہ کی سرحد سے لگتے ہیں، اس لئے انتخابی پینل نے ان ریاستوں کے سربراہ سکریٹریوں کو خط لکھ کر سرحدی علاقوں میں 'ناکہ بندی ’ کرنے کے لئے کہا ہے۔ الیکشن کمیشن نے ان بین ریاستی سرحدوں پر مغربی بنگال کی جانب کسی بھی سماج دشمن عناصر کی آمد ورفت پر نظر رکھنے کے لئے ایسے ناکے بنائے ہیں۔
      First published: