உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بنگال میں بی جے پی کو جھٹکا ، 24 گھنٹے کے اندر دو ممبران اسمبلی نے تھاما ترنمول کانگریس کا دامن

    بنگال میں بی جے پی کو جھٹکا ، 24 گھنٹے کے اندر دو ممبران اسمبلی نے تھاما ترنمول کا دامن ۔ (ANI Twitter/31 Aug 2021)

    بنگال میں بی جے پی کو جھٹکا ، 24 گھنٹے کے اندر دو ممبران اسمبلی نے تھاما ترنمول کا دامن ۔ (ANI Twitter/31 Aug 2021)

    Bengal BJP MLA Join TMC: ٹی ایم سی میں شامل ہوئے بگدا سے بی جے پی ممبر اسمبلی وشوجیت داس نے بی جے پر مبینہ طور پر سنگین الزام لگایا کہ ان کے لیڈر کام نہیں کرنے دے رہے تھے ۔

    • Share this:
      کولکاتہ : مغربی بنگال میں بی جے پی کیلئے پریشانی بڑھتی جارہی ہے ، کیونکہ لیڈروں کے پارٹی چھوڑنے کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے ۔ منگل کو بھی بی جے پی ممبر اسمبلی وشوجیت داس نے برسراقتدار پارٹی ترنمول کانگریس کا دامن تھام لیا ۔ داس کے ساتھ ٹی ایم سی سے وابستہ ہونے والوں میں بی جے پی کے کاونسلر منوتوش ناتھ بھی تھے ۔ تقریبا 24 گھنٹے کے اندر بی جے پی کیلئے یہ دوسرا جھٹکا ہے ۔

      اس سے ٹھیک ایک دن پہلے پیر کو ہی وشنوپور سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی تنمے گھوش بھی پارٹی کو الوداع کہہ کر ٹی ایم سی میں شامل ہوگئے تھے ۔ ان دونوں ممبران اسمبلی کے ترنمول میں آنے کے ساتھ ہی ریاست میں بی جے پی کے ممبران اسمبلی کی کل تعداد کم ہوکر 72 ہوگئی ہے ۔

      ٹی ایم سی میں شامل ہوئے بگدا سے بی جے پی ممبر اسمبلی وشو جیت داس نے کہا کہ میں نے غلط فہمی میں پارٹی تبدیل کرلی تھی ۔ اب ٹی ایم سی کی قیادت پر یقین ہے ۔ ممتا بنرجی ترقیاتی کام کررہی ہیں اور میں ان کے ساتھ رہنا چاہتا ہوں ۔ داس نے بی جے پی پر مبینہ طور پر الزام لگایا کہ ان کے لیڈر کام نہیں کرنے دے رہے تھے ۔

      مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کے ٹکٹ پر الیکشن جیتنے کے کچھ دن بعد ہی سینئر لیڈر مکل رائے بھی ترنمول کانگریس میں واپس آگئے تھے ۔ رائے سال 2017 میں ممتا بنرجی کی زیر قیادت ترنمول کانگریس چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہوگئے تھے ، لیکن گزشتہ دو مئی کو مغربی بنگال اسمبلی الیکشن کے نتائج آنے کے تقریبا ایک ماہ کے بعد وہ واپس ترنمول میں شامل ہوگئے تھے ۔

      حالانکہ آفیشیل طور پر وہ اب بھی کرشنا نگر شمالی سیٹ سے بی جے پی کے ممبر اسمبلی ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: