ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

بنگال حکومت نے 25,000 پناہ گزینوں کو مکان اور زمین کا بنایا مالک

ممتا بنرجی نے صاف طور پر کہا کہ انکی حکومت مانتی ہے کہ بنگلہ دیش سے آنے والے تمام افراد اس ملک کے شہری ہیں اور انہیں بھی وہ حقوق اور مواقع حاصل ہیں جو ملک کے دیگر شہریوں کو حاصل ہیں۔ ذات سرٹیفکٹ بنانے کی پریشانیوں کو دور کرنے کے لئے بھی حکومت نے کئی اصول وضع کئے ہیں۔

  • Share this:
بنگال حکومت نے 25,000 پناہ گزینوں کو مکان اور زمین کا بنایا مالک
وزیراعلی ممتا بنرجی کی فائل فوٹو

کولکاتا۔ سیاست کے میدان میں کوئی کسی سے پیچھے رہنا نہیں چاہتا اور اگر موقع الیکشن کا ہو تو ہر سیاسی پارٹی ایک دوسرے سے آگے رہنے کی کوشش کرتی ہے۔ ایسا ہی کچھ بنگال میں بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔ وزیر داخلہ امت شاہ بنگال کے دورے پر ہیں اس دورے میں ریاست کے قبائلی برادری، ایس سی، ایس ٹی اور او بی سی کے لئے وزیر داخلہ نے کئی اہم اعلانات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ وہیں ممتا بنرجی نے بھی دو قدم آگے بڑھتے ہوئے ریاست کے 25,0000 رفیوجیوں کو زمین ليز پر دینے کا اعلان کیا ہے۔


مغربی بنگال حکومت نے مرکز اور ریاستی حکومت کی زمین پر تعمیر 119کالونیوں کے باشندوں کو زمین اور مکان کا حق دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اب انہیں کوئی بھی ان کے مکان اور زمین سے محروم نہیں کرسکتا ہے۔ وزیراعلی ممتا بنرجی نے کہا کہ کوئی بھی کسی سے زمین نہیں چھین سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 25,000 افراد کو زمین کا مالکانہ حق دیاجارہا ہے جب کہ 25,000 رفیوجیوں کو زمین لیز پر دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ کوئی بھی قبائلیوں کی زمین نہیں چھین سکتا۔ ریاست کی تمام مہاجر کالونیوں کو تسلیم کرلیا گیا ہے۔


ممتا بنرجی نے صاف طور پر کہا کہ انکی حکومت مانتی ہے کہ بنگلہ دیش سے آنے والے تمام افراد اس ملک کے شہری ہیں اور انہیں بھی وہ حقوق اور مواقع حاصل ہیں جو ملک کے دیگر شہریوں کو حاصل ہیں۔ ذات سرٹیفکٹ بنانے کی پریشانیوں کو دور کرنے کے لئے بھی حکومت نے کئی اصول وضع کئے ہیں۔ اس کی وجہ سے سرٹیفکٹ بنانے میں کوئی دشواری نہیں ہو گی۔ وزیر اعلی کے مطابق مرکزی حکومت کے قانون کی رو سے ایس سی اور ایس ٹی سرٹیفکٹ بنانے کے لئے 1950کے دستاویز دکھانا لازمی ہے مگر ان کی حکومت نے آسان قانون بناتے ہوئے فیصلہ کیا ہے کہ اگر والد کے اہل خانہ میں سے کسی کے پاس ذات کا سرٹیفکیٹ ہے تو درخواست دہندہ کو سرٹیفکیٹ حاصل کرنے میں کوئی حرج نہیں ہوگا۔ درخواست دینے کے 4 ہفتوں میں سرٹیفکٹ مل جائے گا۔


سرٹیفکیٹ حاصل کرنے کے لئے 1950کے کسی دستاویز کو دکھانے کی اب ضرورت نہیں ہے۔ وزیراعلی کے اس اعلان سے رفیوجیوں میں خوشی ہے۔ وہ اس فیصلے کو اہم مان رہے ہیں۔ تاہم ووٹ بینک کی اس سیاست میں انہیں انتظار ہے عملی اقدامات کا۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Nov 05, 2020 12:56 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading