ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

کولکاتہ یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کے طلبہ و اساتذہ نے دھرنا منچ سے کیا نئے سال کا استقبال

بنگال میں امسال اسمبلی الیکشن ہے ۔ ایسے اساتذہ و طلبہ نے حکومت کی جانب سے مدد ملنے کی امید ظاہر کرتے ہوئے نئے سال کے آغاز کے ساتھ اپنا احتجاج جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

  • Share this:
کولکاتہ یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کے طلبہ و اساتذہ نے دھرنا منچ سے کیا نئے سال کا استقبال
کولکاتہ یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کے طلبہ و اساتذہ نے دھرنا منچ سے کیا نئے سال کا استقبال

نئی امیدیں، نئی خواہش، نئے منصوبوں کے ساتھ لوگوں نے نئے سال کا استقبال کیا ہے۔ دنیا بھر کے لوگوں کی مشترکہ خواہش یہی ہے کہ دنیا کو کورونا جیسی وبا سے نجات ملے اور لوگوں تک کارآمد ویکسین پہنچے۔ اس تعلق سے ڈاکٹروں کی کوششوں کو اہم مانا جارہا ہے اور ان کی خدمات کو سراہا جارہا ہے ۔ وہیں کولکاتہ میں ڈاکٹروں کا ایک گروپ ایسا بھی ہے جو لاچار ہے، بے بس ہے اور حکومت سے مدد کی فریاد کررہا ہے ۔ ہم بات کررہے ہیں کولکاتہ کے یونانی ڈاکٹروں کی کورونا بحران میں ان کی خدمات کو بھی سراہا گیا ، لیکن یہ ڈاکٹر اپنا حق پانے میں ناکام ہیں ۔ بےبسی کی تصویر بنے یہ ڈاکٹر احتجاج پر بیٹھے ہیں ، جنہیں مہینوں سے تنخواہ نہیں ملی ہے ۔


کولکاتہ یونانی میڈیکل کالج اینڈ اسپتال کے ٹرینی ڈاکٹر شہر کے مختلف سرکاری اسپتالوں میں کورونا وارڈ میں کام کررہے ہیں ، لیکن یونانی ڈاکٹر کی ڈگری حاصل کرنے کے بعد انہیں سرکاری سہولیات حاصل نہیں ہے ۔ نہ نوکری مل رہی ہے اور نہ دیگر سہولیات ۔ سابقہ لیفٹ حکومت نے 2010 میں یونانی کالج اینڈ اسپتال کو سرکاری تحویل میں لینے کے لئے اسمبلی میں بل پاس کیا تھا ، لیکن حکومت میں آئی تبدیلی کے بعد یہ بل سرد خانے میں ڈال دیا گیا ۔


سرکاری سرپرستی نہیں ملنے کی وجہ سے یہ کالج دیگر سہولیات حاصل کرنے میں ناکام ہے ۔ حکومت کی جانب سے ادارے کو سالانہ فنڈ فراہم کیا جاتا ہے ، لیکن حکومت نے امسال اس فنڈ کٹوتی کردی ہے ، جس کے بعد کالج انتظامیہ کے لئے اساتذہ کو تنخواہ دینا مشکل ہورہا ہے ۔ کالج کے پرنسپل محمد ایوب نے حکومت کی بے توجہی کو افسوسناک بتاتے ہوئے بھوک ہڑتال شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔


بنگال میں امسال اسمبلی الیکشن ہے ۔ ایسے اساتذہ و طلبہ نے حکومت کی جانب سے مدد ملنے کی امید ظاہر کرتے ہوئے نئے سال کے آغاز کے ساتھ اپنا احتجاج جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 01, 2021 05:43 PM IST