ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال: خاتون ٹیچر کو رسی باندھ کر پیٹا اور گھسیٹا، ویڈیو وائرل ہونے پر ٹی ایم سی لیڈر برخاست

حادثہ کا ویڈیو سامنے آنے کے بعد ٹی ایم سی کے ضلع سربراہ ارپتا گھوش نے پنچایت لیڈرامل سرکار کو پارٹی سے برخاست کرنے کا حکم دیا ہے۔

  • Share this:
مغربی بنگال: خاتون ٹیچر کو رسی باندھ کر پیٹا اور گھسیٹا، ویڈیو وائرل ہونے پر ٹی ایم سی لیڈر برخاست
خاتون کے پیرباندھ کرگھسیٹا گیا۔

کولکاتا: مغربی بنگال (West Bengal) میں جنوب دیناج پور ضلع میں ایک خاتون ٹیچرکو رسی سے باندھ کر پٹائی کرنےکا معاملہ سامنے آیا ہے۔ الزام ہے کہ مقامی ترنمول کانگریس (TMC) لیڈر امل سرکار نے مبینہ طورپر اپنے حامیوں کے ساتھ پرائمری اسکول کی ٹیچرکے پیروں میں رسی باندھ کرگھسیٹا اور اس کی بری طرح پٹائی کی۔ اس حادثہ کا ویڈیو سوشل میڈیا پروائرل ہورہا ہے۔ معاملہ جنوبی دناپور ضلع کےگنگرام پورکا ہے۔ خاتون ٹیچر کے مطابق، اس کا قصور صرف اتنا تھا کہ اس نے سڑک کی تعمیر کے لئے زبردستی اس کی زمین ایکوائرکرنےکی مخالفت کی تھی۔ اس سےناراض لوگوں نے پہلے خاتون کو دھکا دے کرگرا دیا اور پھر تقریباً 30 فٹ تک پیروں میں رسی باندھ کرگھسیٹا۔ اتنا ہی نہیں، ملزمین نے خاتون کو گھر میں تالا لگا کربند بھی کر دیا۔


ترنمول کانگریس لیڈر معطل


ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہےکہ ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) لیڈر امل سرکار اور اس کےحامی خاتون ٹیچرکو لوہے کی راڈ سے مارتے ہیں۔ اس سے خاتون سڑک پرگرگئی، لیکن بحث کرتی رہی۔ اس کے بعد حملہ آوروں نے خاتون کے پیر باندھ دیئے اور اسے تقریباً 30 فٹ تک گھسیٹتے ہوئے لے گئے۔ اتنا ہی نہیں، متاثرہ ٹیچر نے الزام لگایا کہ اس کی ماں اور بہن کے ساتھ بھی مارپیٹ کی گئی۔ وہیں حادثہ کا ویڈیو سامنے آنےکے بعد ٹی ایم سی ضلع سربراہ ارپتا گھوش نے پنچایت لیڈر امل سرکار کو معطل کرنےکا حکم دے دیا ہے۔


 



زمین کو لےکر ہوا تنازعہ

متاثرہ کے مطابق، ان کےگھرکےآگے 12 فٹ چوڑی سڑک بنائی جارہی ہے۔ اس کےلئے وہ زمین دینےکےلئےتیار ہوگئیں۔ تاہم بعد میں پنچایت نے طےکیا کہ سڑک کی چوڑائی 24 فٹ کی جائےگی، ایسے میں ان کی زیادہ زمین ایکوائرکی جائےگی، جس کی انہوں نے مخالفت کی تھی۔ جب جمعہ کو سڑک کا کام شروع ہوا تو ٹیچر اور اس کی بہن مخالفت کرنی لگی، جس سے ناراض کچھ لوگوں نےگالی گلوچ کرتے ہوئے ان کے ساتھ مارپیٹ شروع کر دی۔
First published: Feb 03, 2020 03:40 PM IST