உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    وزیر اعظم مودی نے وردھا میں دیا نفرت پھیلانے والا بیان؟ الیکشن کمیشن نے مانگی رپورٹ

    وزیر اعظم نریندر مودی کے مہاراشٹر کے وردھا میں  دی گئی ایک تقریر کو لے کر الیکشن کمیشن میں شکایت ہوئی ہے۔

    وزیر اعظم نریندر مودی کے مہاراشٹر کے وردھا میں دی گئی ایک تقریر کو لے کر الیکشن کمیشن میں شکایت ہوئی ہے۔

    وزیر اعظم نریندر مودی کے مہاراشٹر کے وردھا میں دی گئی ایک تقریر کو لے کر الیکشن کمیشن میں شکایت ہوئی ہے۔

    • Share this:
      لوک سبھا الیکشن 2019 کے انتخابی ماحول میں ریلیوں اورروڈ شو کا دورجاری ہے۔ ایسے میں ضابطہ اخلاق کی مبینہ طور پر خلاف ورزی کے معاملات آرہے ہیں۔ وزیر اعظم نریندر مودی کے مہاراشٹر کے وردھا میں  دی گئی ایک تقریر کو لے کر الیکشن کمیشن میں شکایت ہوئی ہے۔ کانگریس کی شکایت کے بعد الیکشن کمیشن نے مہاراشٹر کے انتخابی حکام سے فوری طور پر رپورٹ طلب کی ہے۔

      کانگریس کا الزام ہے کہ وزیر اعظم مودی نے پیر کے روز وردھا میں ریلی کے دوران کانگریس صدر راہل گاندھی کے وائناڈ (کیرالہ) سے الیکشن لڑنے پر تنقید کی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ  راہل گاندھی اسلئے وائناڈ گئے، چونکہ وہاں ہندو اقلیت ہیں اور علاقہ مسلم اکثریتی ہے۔

      دراصل، وزیر اعظم مودی نے پیر کے روز کانگریس پر ووٹ بینک کی سیاست کرنے کے لئے ’ہندو دہشت گرد‘ لفظ کو اچھالنے پر کانگریس پر حملہ بولا تھا۔ انہوں نے کہا تھا کہ عدالت کے حالیہ فیصلہ سے وہ (راہل گاندھی) خوف میں ہیں کیوں کہ ہندو ان کو سبق سکھائےگا۔ اسلئے ان کے اندر ہندو اکثریتی علاقوں میں کھڑے ہونے کی ہمت نہیں ہے۔ وہ انتخابات کے لے دیگر اقلیتی سیٹوں کی طرف دوڑ رہے ہیں۔

       
      First published: