ہندوستان بھر میں جوش و خروش سے منائی جارہی ہے عید، دیکھے جارہے ہیں روح پرور مناظر

Youtube Video

رمضان کے مقدس مہینے میں روزے رکھنے اور اللہ کی رحمت حاصل کرنے اور اپنے گناہوں کی معافی کے لیے پورا مہینہ عبادت میں گزارنے کے بعد اب روزہ دار عید منارہے ہیں۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • New Delhi, India
  • Share this:
    ماہ رمضان کی رخصتی کے ساتھ ہی عید کا چاند دکھائی دیا اور عید کی تیاریاں زوروشور سے شروع ہوگئیں۔ ایسے میں آج ہفتہ 22 اپریل کو ہندوستان بھر میں جوش و خروش سے عیدالفطر منائی جارہی ہے۔ ہر طرف نماز عید کی ادائیگی کے روح پرور مناظر دیکھے جارہے ہیں۔ اس سے قبل، مرکزی رویت ہلال کمیٹی کے صدر مولانا خالد رشید فرنگی محلی نے جمعہ کو اسلامی نیا سال اور ماہ شوال کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا تھا۔  انہوں نے کہا کہ عید کا تہوار ہفتہ کو منایا جائے گا۔ مرکزی شیعہ رویت ہلال کمیٹی کے صدر مولانا سیف عباس نقوی نے بھی شوال کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے علاوہ ادارئہ شریعہ فرنگی محل کے صدر مولانا مفتی ابوالعرفان میاں فرنگی مہی نے بھی عید کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا تھا۔

    یہ بھی پڑھیں:

    Eid 2023: ملک بھر میں جوش و خروش اور عقیدت کے ساتھ سنیچر کو ادا کی جائے گی عید الفطر کی نماز

    رمضان کے مقدس مہینے میں روزے رکھنے اور اللہ کی رحمت حاصل کرنے اور اپنے گناہوں کی معافی کے لیے پورا مہینہ عبادت میں گزارنے کے بعد اب روزہ دار عید منارہے ہیں۔ علمائے کرام کی عید کا چاند دیکھنے کی اپیل کے بعد کل شام کو نماز مغرب کے بعد روزہ داروں کی آنکھیں چاند دیکھنے کے لیے ترس گئیں تھیں۔ ہر کوئی چاند کی جھلک دیکھنے کی کوشش میں آسمان کی طرف دیکھ رہا تھا۔ شام کو سنی اور شیعہ علماء نے عید کا چاند نظر آنے کا اعلان کیا۔ عید کا چاند نظر آنے پر روزہ داروں نے ایک دوسرے کو عید کی مبارکباد دینے کے ساتھ ساتھ عید کی تیاریاں بھی شروع کر دیں۔

    یہ بھی پڑھیں:

    اترپردیش : لکھنو میں جمعۃ الوداع کی نماز کے بعد اسرائیلی جارحیت کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

    عیدگاہ میں صبح 10 بجے ہوگی سب سے بڑی جماعت

    ایش باغ عید گاہ میں آج صبح 10 بجے سبس ے بڑی جماعت سے عید کی نماز ادا کی جائے گی۔ یہاں پر مولانا خالد رشید فرنگی محلی اور ٹیلے والی مسجد میں صبح 9 بجے عید کی نماز مولانا شاہ فضل المنان رحمانی ادا کرائیں گے۔ نماز کی اگلی صف میں جگہ حاسل کرنے کے لیے نمازی صبح فجر کی نماز کے بعد سے ہی ایشباغ عیدگاہ اور ٹیلے والی مسجد میں جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں۔
    Published by:Shaik Khaleel Farhaad
    First published: