ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوپی میں عیدالاضحیٰ کی باجماعت نماز اورکھلے میں قربانی کرنے پریوگی حکومت نے لگائی پابندی، جاری کی گائڈ لائن

کورونا کی عالمی وباء کے دوران پڑنے والی عید الاضحیٰ کے لئے اترپردیش کی یوگی حکومت نے گائڈ لائن جاری کردی ہے۔ یوگی حکومت نے عیدالاضحیٰ کی نماز اور قربانی کے لئے خاص ہدایتیں جاری کی ہیں۔

  • Share this:
یوپی میں عیدالاضحیٰ کی باجماعت نماز اورکھلے میں قربانی کرنے پریوگی حکومت نے لگائی پابندی، جاری کی گائڈ لائن
یوپی میں عیدالاضحیٰ کی باجماعت نماز اورکھلے میں قربانی کرنے پر یوگی حکومت نے لگائی پابندی

الہ آباد: کورونا کی عالمی وباء کے دوران پڑنے والی عید الاضحیٰ کے لئے اترپردیش کی یوگی حکومت نے گائڈ لائن جاری کردی ہے۔ یوگی حکومت نے عیدالاضحیٰ کی نماز اور قربانی کے لئے خاص ہدایتیں جاری کی ہیں۔ گرچہ ریاستی حکومت نے عید الاضحیٰ کی نماز اور قربانی پر کسی طرح کی  پابندی کا کوئی منشا ظاہر نہیں کیا ہے۔ تاہم حکومت نے مقامی پولیس انتظامیہ کو ہدایت دی ہےکہ وہ  علمائے دین اور مسلم رہنماؤں کو اس بات کے لئے راغب کریں کہ عید الا ضحیٰ کی نماز اور قربانی گھر پرہی ادا کی جائے۔ گائڈ لائن میں عید الاضحیٰ کے موقع پرکھلی جگہوں پر قربانی کرنے پر پابندی لگا دی گئی ہے۔


اسی کے ساتھ ہی حکومت نے پولیس محکمے کو سخت ہدایات جاری کی ہے کہ سوشل میڈیا پر افواہ پھیلانے اور فرقہ وارانہ ماحول پیدا کرنے والے شر پسند عناصر کے خلاف سخت کار روائی کی جائے۔ گائڈ لائن میں عیدالاضحیٰ کے دوران حساس علاقوں کی نگرانی ڈرون کیمرے کے ذریعے کرنے اور علاقے میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنے کی بھی ہدایت جاری کی گئی ہے۔ ریاست کے ڈائریکٹر جنرل آف پولیس کی طرف سے جاری سرکولر میں تمام اضلاع کی پولیس انتظامیہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ عید الا ضحیٰ کے دوران کسی بھی طرح کی ناخوشگوار فرقہ وارانہ کشیدگی سے نمٹنے لئے مستعد رہے۔


کورونا کی عالمی وباء کے دوران پڑنے والی عید الاضحیٰ کے لئے اترپردیش کی یوگی حکومت نے گائڈ لائن جاری کردی ہے۔
کورونا کی عالمی وباء کے دوران پڑنے والی عید الاضحیٰ کے لئے اترپردیش کی یوگی حکومت نے گائڈ لائن جاری کردی ہے۔


سرکولر میں عید الاضحیٰ کے تیوہارکو پُرامن اورخوشگوار طریقے منعقد کرانے پر بھی خاص زور دیا گیا ہے۔ ریاستی حکومت کی طرف سے جاری گائڈ لائن میں جو اہم باتیں کہی گئی ہیں  وہ یہ ہیں۔۱۔ کھلی جگہوں یا عوامی مقامات پر قربانی پر پابندی رہےگی۔ ۲۔ غیر مسلم علاقوں میں کھلے طور پر قربانی کا گوشت لانے اور لے جانے پر بھی پابندی عائد رہے گی۔ ۳۔ غیر مسلم مذہبی مقامات یا علاقوں میں قربانی کی باقیات چھوڑے جانے پر فرقہ وارانہ کشیدگی پیدا ہو سکتی ہے، لہٰذ اس بارے میں مقامی پولیس انتظامیہ پوری طرح  سے چوکسی برتے گی۔ ۴۔ ممنوعہ جانوروں کی قربانی کی افواہوں پر لگام لگانے کے لئے مقامی پولیس مستعد رہے گی۔ ۵۔ افواہ پھیلانے والے شر پسند عناصر کے خلاف پولیس سخت اور مؤثرکاروائی کرے گی۔۶۔ سوشل میڈیا پر غلط اطلاع دینے اور افواہیں پھیلانے والوں کی خلاف سخت کار روائی کی جائے گی۔

حکومت نے پولیس محکمے کو سخت ہدایات جاری کی ہے کہ سوشل میڈیا پر افواہ پھیلانے اور فرقہ وارانہ ماحول پیدا کرنے والے شر پسند عناصر کے خلاف سخت کار روائی کی جائے۔
حکومت نے پولیس محکمے کو سخت ہدایات جاری کی ہے کہ سوشل میڈیا پر افواہ پھیلانے اور فرقہ وارانہ ماحول پیدا کرنے والے شر پسند عناصر کے خلاف سخت کار روائی کی جائے۔


۷۔ علمائے دین اور مسلم رہنماؤں کو گھر پر ہی عید الاضحیٰ کا تیوہار منانے اور مسجدوں میں نماز با جماعت نہ ادا کرنے کے لئے راغب کیا جائے گا۔ ۸۔ مقامی خفیہ پولیس کے نظام کو مذید چست درست بنایا جائے۔ ۹۔ فرقہ وارانہ ہاٹ اسپاٹ کی نشاندہی کی جائے اور ان حساس مقامات پر مجسٹریٹ تعینات کئے جائیں۔ ۱۰۔ گئو کشی کے واقعات اور گئو ونش کی ممنوعہ تجارت پر سختی سے روک لگائی جائے۔ ۱۱۔ عید الا ضحیٰ کی نماز کے وقت مسجدوں اور عید گاہوں کے راستے میں ممنوعہ جانور کے گھسنے پر روک لگائی جائے۔ ۱۲۔ سماج میں پھیلنے والی افواہوں کی پولیس کی طرف سے فوراً تردید کی جائے۔ سرکولر میں اس بات پر بھی زور دیا گیا ہےکہ عید الاضحیٰ کا تیوہار فرقہ وارانہ اعتبار سے کافی حساس رہا ہے۔ ایسے میں مقامی پولیس انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے اپنے فرائض کو مستعدی  کے ساتھ  انجام دیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 22, 2020 05:55 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading