ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اسمبلی انتخابات : کاونٹنگ ڈے کیلئے ای سی کی گائیڈلائن تیار، امیدواروں کیلئے آرٹی پی سی آر ٹیسٹ لازمی

5 State Assembly Election Counting Day: پانچ ریاستوں میں ہوئے اسمبلی انتخابات کے ووٹوں کی گنتی دو مئی کو ہوگی ۔ حالانکہ مغربی بنگال میں ابھی ایک مرحلہ کا الیکشن باقی ہے ۔

  • Share this:
اسمبلی انتخابات : کاونٹنگ ڈے کیلئے ای سی کی گائیڈلائن تیار، امیدواروں کیلئے آرٹی پی سی آر ٹیسٹ لازمی
اسمبلی الیکشن: کاونٹنگ ڈے کیلئے ای سی کی گائیڈلائن تیار، امیدواروں کیلئے RT-PCR ٹیسٹ لازمی

نئی دہلی : پانچ ریاستوں میں ہوئے اسمبلی انتخابات کے ووٹوں کی گنتی کیلئے الیکشن کمیشن نے تفصیلی گائیڈ لائنس تیار کرکے متعلقہ ریاستوں کو بھیج دیا ہے ۔ گائیڈ لائنس کے مطابق امیدوار یا ایجنٹ کو ووٹوں کی گنتی سے پہلے کورونا وائرس کی آر ٹی پی سی آر نگیٹو رپورٹ یا ٹیکہ کاری کی دونوں ڈوز لینے کی صورت میں ہی جانے کی اجازت ہوگی ۔ اس کے ساتھ ہی کمیشن نے کہا ہے کہ کاونٹنگ مراکز کے باہر لوگوں کا ہجوم جمع نہیں ہوگا ۔ ساتھ ہی ریاستی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھاریٹی کے پروٹوکول کے مطابق کاونٹنگ ہال بڑا ہوگا ۔ ووٹوں کی گنتی کے دن امیدوار اور ایجنٹ کیلئے پی پی ای کٹ دستیاب کرایا جائے گا ۔ ساتھ ہی گلووز ، ماسک ، سینیٹائز ، فیس شیلڈ بھی گنتی سے وابستہ لوگوں اور سیکورٹی اہلکاروں کو مہیا کرایا جائے گا ۔


بتادیں کہ الیکشن کمیشن نے ملک میں کورونا کے سنگین بحران کے پیش نظر چار ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطہ کے اسمبلی انتخابات کے نتائج کے آنے کے بعد فتح جلوس نکالنے پر منگل کو پابندی عائد کردی ۔ آسام ، تمل ناڈو ، مغربی بنگال ، کیرالہ اور پڈوچیری میں دو مئی کو ووٹوں کی گنتی ہوگی ۔ مغربی بنگال میں ابھی آٹھویں اور آخری مرحلہ کی ووٹنگ 29 مئی کو ہونی ہے جبکہ دیگر چار ریاستوں میں ووٹنگ ختم ہوچکی ہے ۔


کمیشن کی جانب سے سبھی ریاستوں اور مرکز کے انتظام خطوں کے چیف الیکشن افسر کو جاری حکم میں کہا گیا ہے کہ پورے ملک میں کورونا کے معاملات میں اضافہ کے پیش نظر کمیشن نے فیصلہ کیا ہے کہ ووٹوں کی گنی کے دوران زیادہ سخت بندوبست پر عمل کیا جائے ۔ دو مئی کو کاوٹنگ  کے بعد کسی بھی فتح جلوس کو نکالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ ساتھ ہی جیت کا سرٹیفکیٹ حاصل کرنے کیلئے کامیاب امیدوار یا اس کے ذریعہ مجاز شخص کے ساتھ دو سے زیادہ لوگوں کے پہنچنے کی اجازت نہیں ہوگی ۔


فتح جلوس نکالنے پر پابندی کا یہ حکم آنے سے ایک دن پہلے مدراس ہائی کورٹ نے الیکشن کے دوران کورونا سے متعلق گائیڈلائنس پر عمل کرانے میں ناکام رہنے کیلئے الیکشن کمیشن کے خلاف سخت رخ اختیار کیا تھا ۔ عدالت نے کہا تھا کہ ملک میں کورونا کی دوسری لہر آنے کیلئے الیکشن کمیشن واحد ذمہ دار ادارہ ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 28, 2021 04:45 PM IST