ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا قہر میں سات ماہ بعد ملی ملازمین کو تنخواہ، ملازمین کے چہرے پر لوٹی خوشی

مدھیہ پردیش حج کمیٹی کے ملازمین اس کورونا قہر میں ایک دو ماہ سے نہیں بلکہ سات ماہ سے تنخواہ سے محروم تھے۔ نیوز ایٹین اردو نے حج کمیٹی ملازمین کی تنخواہوں کے مسائل کو لے کرجب تحریک شروع کی تو محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نہ صرف خوف غفلت سے بیدار ہوئے بلکہ سات ماہ بعد ملازمین کی تنخواہ بھی جاری کی۔

  • Share this:
کورونا قہر میں سات ماہ بعد ملی ملازمین کو تنخواہ، ملازمین کے چہرے پر لوٹی خوشی
کورونا قہر میں سات ماہ بعد ملی ملازمین کو تنخواہ، ملازمین کے چہرے پر لوٹی خوشی

بھوپال: کورونا قہر میں زندگی کی ڈگر کتنی مشکل ہے، یہ کسی چھپانہیں ہے۔ باہرکورونا کا خوف ہو اورگھرکےاندربچوں کی بھوک ہو تو آپ اندازہ لگاسکتے ہیں کہ اس شخص پرکیا گزرتی ہوگی۔ مدھیہ پردیش حج کمیٹی کے ملازمین اس کورونا قہر میں ایک دو ماہ سے نہیں بلکہ سات ماہ سے تنخواہ سے محروم تھے۔ نیوز ایٹین اردو نے حج کمیٹی ملازمین کی تنخواہوں کے مسائل کو لے کرجب تحریک شروع کی تو محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نہ صرف خوف غفلت سے بیدار ہوئے بلکہ سات ماہ بعد ملازمین کی تنخواہ بھی جاری کی۔


سات ماہ بعد تنخواہ جاری ہونے پر ملازمین کے چہرے پر جو خوشی دکھائی دے رہی ہے، وہ بیان سے باہر ہے۔ ملازمین نے تنخواہ ملنے کے بعد نیوز 18 اردو کا خصوصی طور پرشکریہ ادا کیا ہے۔ در اصل حج کمیٹی کے ملازمین کے پریشان ہونے کی دو وجوہات تھی۔ پہلی وجہ تو یہ تھی کہ حکومت نے حج کمیٹی میں ونڈر سسٹم کا نفاذ کیا اور اس کے تحت تنخواہ حج کمیٹی کو نہ دے کر ملازمین کے اکاؤنٹ میں راست طور پر پہنچانا تھا، جس کے لئے محکمہ اقلیتی فلاح و بہبودکو ہر ملازم کی تقرری اور سلیری اسٹرکچر کا دستیاب چاہیئے تھا جو وقت پر جمع نہیں کیا گیا۔


 حج کمیٹی کے انچارج یاسر عرفات کہتے ہیں کہ الحمد اللہ ملازمین کو 7 ماہ بعد تنخواہ جاری ہوگئی ہے۔ یہ تنخواہیں ملازمین کے اکاؤنٹ میں پہنچ گئی ہیں اور اس کے لئے نیوز 18 اردو کا جتنا شکریہ ادا کیا جائے، وہ کم ہے۔

حج کمیٹی کے انچارج یاسر عرفات کہتے ہیں کہ الحمد اللہ ملازمین کو 7 ماہ بعد تنخواہ جاری ہوگئی ہے۔ یہ تنخواہیں ملازمین کے اکاؤنٹ میں پہنچ گئی ہیں اور اس کے لئے نیوز 18 اردو کا جتنا شکریہ ادا کیا جائے، وہ کم ہے۔


دوسری وجہ یہ بھی تھی کہ حج کمیٹی کی تشکیل تو سال پہلی کی گئی تھی، لیکن انتخاب نہیں ہونے سےکوئی کمیٹی کا چیئرمین نہیں بنایا جا سکے اور ان دو سالوں میں کمیٹی کی کسی میٹنگ کا بھی انعقاد نہیں کیا گیا۔ اسی کے ساتھ حج کمیٹی کے ایگزیکیٹو آفیسر کا ریٹائرمنٹ ہونے اورکسی نئے انچارج کا تقرر نہیں ہونے سے ملازمین کی مشکلات میں اضافہ ہوتا گیا۔ نیوز 18 اردو کی خبر کے بعد محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نے حج کمیٹی کے ایگزیکٹیو کے عہدے پر کسی کا تقرر تو نہیں کیا بلکہ مساجد کمیٹی کے مہتمم یاسر عرفات کو حج  کمیٹی کا اضافی چارج دیا گیا۔

حج کمیٹی کے انچارج یاسر عرفات کہتے ہیں کہ الحمد اللہ ملازمین کو 7 ماہ بعد تنخواہ جاری ہوگئی ہے۔ یہ تنخواہیں ملازمین کے اکاؤنٹ میں پہنچ گئی ہیں اور اس کے لئے نیوز 18 اردو کا جتنا شکریہ ادا کیا جائے، وہ کم ہے۔ نیوز 18 اردو نے ہماری بات محکمہ اقلیتی فلاح وبہبود اور اقلیتی وزیر تک پہنچائی اور ملازمین کی تنحواہ کی راہ ہموار ہوئی۔ اب ایسا نظام بنایا جا رہا ہےکہ ملازمین کو ہر ماہ وقت پر تنخواہ مل سکے اور حج کمیٹی کے جو دوسرے مسائل ہیں، ان کا بھی جلد حل نکلے گا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Apr 05, 2021 11:59 PM IST