ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

جھارکھنڈ کے منظور شدہ مدارس کے ملازمین 42 ماہ سے تنخواہوں سے ہیں محروم

جھارکھنڈ میں 114 مدارس ملحقہ کے اساتذہ و ملازمین تقریباً 42 ماہ سے محروم ہیں۔ تنخواہ ادائیگی کے تعلق سے ریاستی کابینہ کی منظوری کے باوجود یہ ملازمین تنخواہوں سے محروم ہیں۔

  • Share this:
جھارکھنڈ کے منظور شدہ مدارس کے ملازمین 42 ماہ سے تنخواہوں سے ہیں محروم
جھارکھنڈ کے منظور شدہ مدارس کے ملازمین 42 ماہ سے تنخواہوں سے ہیں محروم ہیں۔ وفد نے کانگریس رکن اسمبلی دیپیکا پانڈے سے ملاقات کی ہے۔

رانچی: جھارکھنڈ میں 114 مدارس ملحقہ کے اساتذہ و ملازمین تقریباً 42 ماہ سے محروم ہیں۔ تنخواہ ادائیگی کے تعلق سے ریاستی کابینہ کی منظوری کے باوجود یہ ملازمین تنخواہوں سے محروم ہیں۔ اس مسئلہ کو لے کر مدرسہ اساتذہ کے ایک وفد نے گڈا کے ضلع سکریٹری ماسٹر محمد شاہجہاں کی قیادت میں مہگاما اسمبلی حلقہ کی کانگریس رکن اسمبلی دیپیکا پانڈے سے رانچی واقع ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ آل جھارکھنڈ مدرسہ ٹیچرس ایسوسی ایشن کے سکریٹری نشرواشاعت محمد حماد قاسمی کے مطابق وفد نے ممبر اسمبلی کو طویل عرصہ سے تنخواہ نہ ملنے کے سبب مدرسہ اساتذہ کی نازک ترین مالی حالت سے واقف کرایا اور دریافت کیا کہ جب کابینہ کی نشست میں مذکورہ بالا مدارس کے اساتذہ وملازمین کی تین سال کی تنخواہ کی ادائیگی کا فیصلہ لیا جا چکا ہے، پھر تنخواہ کی ادائیگی میں اس قدر تاخیرکیوں ہو رہی ہے۔


ممبر اسمبلی نے وفد کی باتیں نہایت سنجیدگی اور دلچسپی سے سننے کے بعد کہا کہ ریاستی سرکار کی نظر ہر چیز پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اس سلسلے میں متعلقہ اعلیٰ افسران سے بات کی ہے۔ انہوں نےکہا کہ ہمیں بتایا گیا ہے کہ محکمہ تعلیم کے ڈائریکٹر کی غیر موجودگی کی وجہ سے مدرسہ اساتذہ کی تنخواہوں کی ادائیگی میں تاخیر ہو رہی ہے۔ دیپیکا پانڈے نے کیا کہ جلد ہی ڈائریکٹر آجائیں گے تو اضلاع میں الاٹمنٹ بھیج دیا جائےگا۔ ممبر اسمبلی نے وفد کو یہ بھی بتایا کہ اس سلسلے میں میری بات وزیر عالمگیر عالم سے بھی ہوئی ہے۔


عالمگیر عالم نے بھی دوران گفتگو کہا کہ میرے حلقہ کے مدارس کے اساتذہ بھی اس سلسلے میں مجھ سے کئی بار مل چکے ہیں۔ لمبے عرصہ سے تنخواہ نہ ملنے کی وجہ سے وہ شدید پریشانی میں مبتلا ہیں اور نوبت فاقہ کشی تک پہنچ چکی ہے۔ عالمگیر عالم نے کہا ہےکہ آئندہ ہونے والی کابینہ کی نشست میں اس بات کو رکھوں گا۔ ممبر اسمبلی دیپیکا پانڈے نے امید کا اظہار کیا ہے کہ چار پانچ دنوں میں اساتذہ کی تنخواہیں ادا ہو جائیں گی۔ وفد میں مدرسہ اسلامیہ رانچی کے پرنسپل مولانا محمد رضوان قاسمی، ماسٹر محمد شاہجہاں، محمد حماد قاسمی، شرف الدین رشیدی، ڈاکٹر آفتاب اور ماسٹر ابوالکلام شریک تھے۔

Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 12, 2020 11:46 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading