سابق فوجی جوان نے جے جے پی سے دیا استعفیٰ، بی جے پی کی حمایت کے فیصلے پرعوام کو دھوکہ دینے کا الزام عائد کیا

فوج میں رہتے ہوئے سرخیوں میں آنے والے تیج بہادریادونےطنزکرتے ہوئے کہا کہ جے جے پی نےبغیربلائے ہی بی جے پی کو حمایت دے دی۔

Oct 26, 2019 11:13 PM IST | Updated on: Oct 27, 2019 10:41 AM IST
سابق فوجی جوان نے جے جے پی سے دیا استعفیٰ، بی جے پی کی حمایت کے فیصلے پرعوام کو دھوکہ دینے کا الزام عائد کیا

سابق بی ایس ایف جوان تیج بہادریادو نے جے جے پی سے استعفیٰ دے دیا۔

ریواڑی: ہریانہ کی کرنال اسمبلی سیٹ سے جن نائک جنتاپارٹی (جے جے پی ) کے امیدواررہے تیج بہادر یادو نے دشینت چوٹالہ پرزبانی حملہ بوالا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چودھری دیوی لال کے نام پر دشینت چوٹالہ نے ہریانہ کے عوام کو دھوکہ دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہریانہ میں جے جے پی نے بی جے پی کی بی ٹیم بن کرالیکشن لڑا۔ انہوں نے کہا کہ جے جے پی کوبی جے پی کے خلاف الیکشن لڑنے کے لئے ہریانہ کے عوام نے ووٹ دیا۔ تیج بہادریادو نے طنز کرتے ہوئے کہا کہ جے جے پی نے بغیربلائے ہی بی جے پی کو حمایت دے دی۔ انہوں نے کہا کہ جے جے پی کا یہ قدم عوام جنہوں نے پار

Loading...

ٹی کو ووٹ دیا، اس کے ساتھ ایک دھوکہ ہے۔

جے جے پی سے استعفیٰ دینے کے بعد تیج بہادرنے کہا کہ وہ کھاپوں اورنوجوانوں کو ساتھ لے کرجے جے پی کے اس قدم کی مخالفت میں سڑک پراتریں گے۔ تیج بہادر یادو بی ایس ایف کے جوان رہے ہیں۔ واضح رہے کہ تیج بہادر یادو فوج میں خراب کھانے کی شکایت کرکے سرخیوں میں آئے تھے۔

واضح رہےکہ ہریانہ اسمبلی انتخابات میں کسی بھی جماعت کواکثریت نہیں ملی ہے۔ جے جے پی نے 10 سیٹیں حاصل کی ہیں اوروہ کنگ میکرکے رول میں سامنے آئی۔ پارٹی لیڈردشینت چوٹالہ نے بی جے پی کو حمایت دینے کا فیصلہ کیا ہے، جس کے بعد انہیں نائب وزیر اعلیٰ کی کرسی دی جائے گی۔ وہ وزیراعلیٰ منوہرلال کھٹرکے ساتھ اتوارکونائب وزیراعلیٰ کے طورپرحلف لے رہے ہیں۔

Loading...