ایکسکلوزیو انٹرویو : یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا : غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی کی وجہ سے یوپی میں نہیں ہوئی ماب لنچنگ

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ اترپردیش میں گزشتہ ڈھائی سالوں میں ماب لنچنگ اور فساد کے واقعات پیش نہیں آئے ، کیونکہ یہاں غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی لگی ہوئی ہے ۔ یوگی آدتیہ ناتھ نے یہ دعوی نیوز 18 کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی کے ساتھ ایک خاص انٹرویو میں کیا ۔

Sep 19, 2019 09:44 PM IST | Updated on: Sep 19, 2019 09:44 PM IST
ایکسکلوزیو انٹرویو : یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا : غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی کی وجہ سے یوپی میں نہیں ہوئی ماب لنچنگ

غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی کی وجہ سے یوپی میں نہیں ہوئی ماب لنچنگ : یوگی آدتیہ ناتھ

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ اترپردیش میں گزشتہ ڈھائی سالوں میں ماب لنچنگ اور فساد کے واقعات پیش نہیں آئے ، کیونکہ یہاں غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی لگی ہوئی ہے ۔ یوگی آدتیہ ناتھ نے یہ دعوی نیوز 18 کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی کے ساتھ ایک خاص انٹرویو میں کیا ۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا ماب لنچنگ کے واقعات کی وجہ سے ریاست میں سرمایہ کاری متاثر ہوئی ہے ، تو انہوں نے کہا کہ نہیں ، ایسا پہلے ہوا کرتا تھا ۔ گزشتہ ڈھائی سال میں ایک بھی فساد نہیں ہوا ۔ دوسری بات یہ کہ اترپردیش میں ماب لنچنگ کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا ، کیونکہ ہم نے ان چیزوں پر پابندی لگادی ہے جس کی وجہ سے فساد ہوتے تھے ، ہم نے غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی عائد کردی ہے ۔

خیال رہے کہ 2017 کے اپنے انتخابی منشور پر عمل کرتے ہوئے حکومت نے اترپردیش میں غیر قانونی سلاٹر ہاوس پر پابندی عائد کردی تھی ۔ ساتھ ہی ساتھ گایوں کی اسمگلنگ پر بھی روک لگائی گئی تھی ۔

Loading...

yogi-adityanath-rahul-joshi-02

وزیر اعلی نے کہا کہ حکومت لوک سبھا انتخابات کے دوران ایشو بنے آوارہ جانوروں کو لے کر بھی  کام کررہی ہے اور کئی اقدامات کئے ہیں ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ ہم نے آوارہ جانوں کو لے کر ایک مہم چلائی ہے ۔ یہ کامیاب بھی ہورہی ہے ۔ آج ریاست میں تقریبا ساڑھ تین لاکھ  آوارہ جانور ہیں ، ہم ایک اسکیم لے کر آئے ہیں ۔ اگر کوئی شخص ایک آوارہ گائے کو گود لیتا ہے ، تو اس کو ماہانہ 900 روپے ملیں گے ۔ لیکن اس کی شرط یہ ہے کہ وہ گائے کی خدمت کرے ۔ ہر ماہ وہ گائے کو جانوروں کے ڈاکٹر کے پاس لے کر جائے ، ہم اس کیلئے بھی ادائیگی کریں گے ۔

وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ یہ ایک پریشانی ہے کہ لوگ گایوں کو چھوڑ دیتےہیں جب وہ دودھ دینا بند کردیتی ہے ۔ وزیر اعلی نے کہا کہ اس بحث کے دو پہلو ہیں ، پہلا عام شخص کی اقتصادی حالت اور دوسرا ایک گائے جو 100-200 ملی لیٹر دودھ دیتی تھی ، لیکن اب وہ اس کے قابل نہیں ہے ، اس پریشانی کے حل کی سمت میں بھی ہم نے قدم اٹھانے شروع کردئے ہیں ۔

Loading...