ایکسکلوزیو انٹرویو : بڑھتی ہوئی آبادی اہم مسئلہ ، مناسب وقت پر حکومت کنٹرول کیلئے اٹھائے گی قدم : یوگی آدتیہ ناتھ

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے نیٹ ورک 18 کے ساتھ ایکسکلوزیو انٹرویو میں بڑھتی ہوئی آبادی کو ایک اہم معاملہ قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے وسائل کی تقسیم سبھی کے درمیان موثر انداز سے ہو ، یہ آبادی پر قابو پانے کے بعد ہی ہوپائے گا ۔

Sep 18, 2019 10:27 PM IST | Updated on: Sep 18, 2019 10:27 PM IST
ایکسکلوزیو انٹرویو : بڑھتی ہوئی آبادی اہم مسئلہ ، مناسب وقت پر حکومت کنٹرول کیلئے اٹھائے گی قدم : یوگی آدتیہ ناتھ

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی فائل فوٹو ۔

اترپردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے نیٹ ورک 18 کے ساتھ ایکسکلوزیو انٹرویو میں بڑھتی ہوئی آبادی کو ایک اہم معاملہ قرار دیا ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے وسائل کی تقسیم سبھی کے درمیان موثر انداز سے ہو ، یہ آبادی پر قابو پانے کے بعد ہی ہوپائے گا ۔  نیٹ ورک 18 کے ایڈیٹر ان چیف راہل جوشی نے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کا خصوصی انٹرویو کیا ۔ انہوں نے کئی اہم معاملات پر بات چیت کی ۔

پندرہ اگست کو وزیر اعظم مودی کی تقریر میں آبادی پر کنٹرول کا تذکرہ سے متعلق ان کی رائے کے بارے میں پوچھے جانے پر وزیر اعلی نے کہا کہ یہ ایک اہم معاملہ ہے اور اس پر بات چیت کی جانی چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس موجودہ وقت میں جو انسانی وسائل ہیں ، اب اس کی کوالیٹی میں بہتری کی بات ہونی چاہئے ۔ آپ کتنی بھی ترقی کرلیں گے ، اگر آبادی کو کنٹرول نہیں کریں گے تو پریشانی کھڑی ہوسکتی ہے ۔

Loading...

وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ آپ کو اس بات کا ہمیشہ خیال رکھنا چاہئے کہ ترقی مساوی ہو اور یہ سبھی کیلئے ہو ۔ میرا خیال ہے کہ آبادی پر کنٹرول سے یہ زیادہ موثر ہوگا ۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا حکومت اس بارے میں سوچ رہی ہے تو یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ ہاں اور جب ضرورت پڑے گی اس سمت میں قدم اٹھایا جائے گا اور اس بارے میں بات چیت چل رہی ہے ۔

ہندی کو لے کر جاری تنازع پر یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ ہندی ہماری سرکاری زبان ہے اور ہر سرکاری زبان کا احترام کیا جانا چاہئے ۔ جو بھی ہمارے ملک میں قومی احترام کی علامتیں ہیں ، ان کا احترام ہونا چاہئے ۔ ان سبھی چیزوں کا احترام کرنا ہم سبھی کا فریضہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ تو ہو ہی سکتا ہے کہ عدالت کا کام آپ انگریزی کے ساتھ ساتھ وہاں کی مقامی زبان میں بھی کرسکتے ہیں ۔ آپ تمل ناڈو کی بات کرتے ہیں تو انگریزی کے ساتھ ساتھ تمل بھی دی جائے ۔ عام آدمی انگریزی نہیں جانتا ، ایسے میں اس کو تمل میں بھی یہ جاننے کا حق ہونا چاہئے کہ عدالت میں کیا کیا ہو رہا ہے ۔ اس کے علاوہ وہ سرکاری زبان کے ناطے ہندی کو قبول کریں ، یہ اچھی بات ہے۔

Loading...