உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

     شادی شدہ خاتون سے فیس بک پر کی دوستی، پھر کرنے لگا پیچھا، پولیس نے کیا گرفتار

    ملزم کی شناخت بھجن پورہ کے چاند باغ باشندہ رضوان انصاری کے طور پر ہوئی ہے، جو جیکٹ بنانے کا کام کرتا ہے۔ ایک دن فیس بک پر بات چیت میں ملزم نے خاتون کا پتہ جان لیا، پھر اس کے گھر پہنچ کر چوری چھپے اس کی تصویر کھینچ لی۔ جب خاتون نے اس سے بات کرنے سے منع کر دیا، تب ملزم نے اسے دھمکی دی کہ وہ سوشل میڈیا پر اس کی تصویر اور بات چیت شیئر کردے گا۔

    ملزم کی شناخت بھجن پورہ کے چاند باغ باشندہ رضوان انصاری کے طور پر ہوئی ہے، جو جیکٹ بنانے کا کام کرتا ہے۔ ایک دن فیس بک پر بات چیت میں ملزم نے خاتون کا پتہ جان لیا، پھر اس کے گھر پہنچ کر چوری چھپے اس کی تصویر کھینچ لی۔ جب خاتون نے اس سے بات کرنے سے منع کر دیا، تب ملزم نے اسے دھمکی دی کہ وہ سوشل میڈیا پر اس کی تصویر اور بات چیت شیئر کردے گا۔

    ملزم کی شناخت بھجن پورہ کے چاند باغ باشندہ رضوان انصاری کے طور پر ہوئی ہے، جو جیکٹ بنانے کا کام کرتا ہے۔ ایک دن فیس بک پر بات چیت میں ملزم نے خاتون کا پتہ جان لیا، پھر اس کے گھر پہنچ کر چوری چھپے اس کی تصویر کھینچ لی۔ جب خاتون نے اس سے بات کرنے سے منع کر دیا، تب ملزم نے اسے دھمکی دی کہ وہ سوشل میڈیا پر اس کی تصویر اور بات چیت شیئر کردے گا۔

    • Share this:
      نئی دہلی: سوشل میڈیا پر ایک شادی شدہ خاتون کو مبینہ طور پر دھمکی دینے اور اس کا پیچھا کرنے سے متعلق 30 سالہ ایک شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔ پولیس نے منگل کو یہ جانکاری دی۔

      پولیس کے مطابق، ملزم کی شناخت بھجن پورہ کے چاند باغ باشندہ رضوان انصاری کے طور پر ہوئی ہے، جو جیکٹ بنانے کا کام کرتا ہے۔ ایک شخص نے 11 مئی کو پولیس سے شکایت کی کہ رضوان انصاری اس کی بیوی کو بات چیت کرنے اور محبت کی درخواست قبول کرنے کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے اور ایسا نہ کرنے پر اسے جان سے مار ڈالنے کی دھمکی دے رہا ہے۔

      پولیس نے جانچ میں پایا کہ ملزم نے فیس بک پر خاتون سے دوستی کی اور پھر وہ اسے پیغام بھیجنے لگا۔ ایک سینئر پولیس افسر کے مطابق، کچھ وقت بعد وہ خاتون پر دباو ڈالنے لگا کہ وہ اس سے بات چیت کرے اور اس کے محبت کی درخواست قبول کرے۔

      پولیس ڈپٹی کمشنر (باہری) سمیر شرما نے بتایا کہ تکنیکی نگرانی کے ذریعہ پولیس نے رضوان انصاری کا پتہ لگایا اور اسے گرفتار کرلیا۔ سمیر شرما کے مطابق، پوچھ گچھ کے دوران رضوان انصاری نے بتایا کہ سال 2018 میں اس نے فیس بک پر اس خاتون کا پروفائل دیکھا اور اسے فرینڈ ریکویسٹ بھیجا۔ جب خاتون نے اس کی درخواست قبول کرلی، تب دونوں بات کرنے لگے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      Exclusive: آئی ایس آئی کا ناپاک منصوبہ اب بھی جاری، پی او کے میں چلا رہا ہے کئی دہشت گردانہ کیمپ

      پولیس کے مطابق، ایک دن بات چیت میں ملزم نے خاتون کا پتہ جان لیا، پھر اس کے گھر پہنچ گیا اور چوری چھپے اس کی تصویر کھنچوا لی۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اب وہ خاتون کا پیچھا کرنے لگا اور جب اس نے اس سے بات کرنے سے منع کردیا تب ملزم نے اسے دھمکی دی کہ وہ سوشل میڈیا پر اس کی تصویر اور بات چیت کو اس کی فیملی کے لوگوں کے ساتھ شیئر کر دے گا۔

      پولیس نے کہا کہ رضوان انصاری کے پاس سے دو موبائل فون اور تین سم کارڈ ضبط کئے گئے ہیں، جن کے ذریعہ وہ خاتون سے بات چیت کرتا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: