ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

لداخ میں ہندوستانی فضائیہ کی طاقت سے پریشان چین ، روس سے لے رہا ایم آئی ہیلی کاپٹر

دراصل ڈریگن نے چوری کی تکنیک سے جو ہیلی کاپٹر بنائے ہیں ، وہ اونچائی والے علاقوں میں ناکام ہیں ۔ چین کے خود کے بنائے زیڈ 10 ایم ای اور زیڈ 20 ہیلی کاپٹر اونچائی والے علاقوں میں بالکل کارگر نہیں ہیں ۔

  • Share this:
لداخ میں ہندوستانی فضائیہ کی طاقت سے پریشان چین ، روس سے لے رہا ایم آئی ہیلی کاپٹر
ہندوستانی فضائیہ نے پہلے سے ہی اپنے ایم آئی 17 وی 5 کو تعینات کر رکھا ہے ۔ (photo: indianairforce.nic.in)

چین خود کو دنیا کے سب سے طاقتور ممالک کی فہرست میں سب سے پہلے نمبر پر رکھتا ہے ۔ تکنیکی طور پر خود کو اول مانتا ہے ، لیکن ہندوستانی فضائیہ سے اگر چینی فوج کا موازنہ کیا جائے تو اس قطار میں کافی پیچھے کھڑا ہے ۔ اس کمی کو پورا کرنے کیلئے چین نے روس سے 500 ایم آئی ہیلی کاپٹر خریدنے کا قرار کیا ہے  خاص طور پر ہائی ایلٹی ٹیوٹ والے علاقوں میں ہندوستان کا مقابلہ کرنے کیلئے چین ان ہیلی کاپٹروں کی خریداری کررہا ہے ۔


خفیہ رپورٹ کے مطابق چین نے روس سے ایم آئی ہیلی کاپٹر کے تین ویریئنٹ MI-171E , MI-171SH اور MI-171LT لے رہا ہے ۔ ان میں 140 کی ڈیلیوری گزشتہ سال ہوچکی ہے جبکہ باقی ماندہ ہیلی کاپٹر اگلے چار سالوں میں چین کو مل جائیں گے ۔ ایسا نہیں ہے کہ چین کے پاس ہیلی کاپٹر بنانے کی تکنیک نہیں ہے ۔ دراصل ڈریگن نے چوری کی تکنیک سے جو ہیلی کاپٹر بنائے ہیں ، وہ اونچائی والے علاقوں میں ناکام ہیں ۔ چین کے خود کے بنائے زیڈ 10 ایم ای اور زیڈ 20 ہیلی کاپٹر اونچائی والے علاقوں میں بالکل کارگر نہیں ہیں ۔


چین کے بنائے ہیلی کاپٹروں کی بات کریں تو زیڈ 10 ایم آئی اٹیک ہیلی کاپٹر ہے ، زیڈ 20 ٹیکٹیکل یوٹیلیٹی ہیلی کاپٹر ہے ۔ ان دونوں ہیلی کاپٹر کی انجن صلاحیت اتنی نہیں ہے کہ وہ اونچائی والے علاقوں میں کام کرسکیں ۔ کہہ سکتے ہیں کہ چینی ہیلی کاپٹر ہائی ایلٹی ٹیوڈ کے لائق نہیں ہے ۔ زیڈ 20 ملٹی فنکشن کامبیٹ ہیلی کاپٹر نہیں ہے ۔ اس میں ہتھیار نہیں ہے اور آرمر پروٹیکشن بھی نہیں ہے ۔ حالانکہ چین اپنے انہیں ہیلی کاپٹروں کو اپنے آل ویدر فرینڈ یعنی پاکستان کو یہ کہہ کر فروخت کرنے کی کوشش کررہا ہے کہ یہ دنیا کے سب سے بہتر ہیلی کاپٹر ہیں ۔


چین کو ہیلی کاپٹر دینے والے روس کے ساتھ ہندوستان کے رشتے پہلے سے ہی مضبوط ہیں ۔ ہندوستانی فضائیہ میں زیادہ تر طیارے ، جس میں ہیلی کاپٹر ، فائٹر اور مال بردار طیارے روسی ساخت کے ہی ہیں اور جس ایم آئی ہیلی کاپٹر سے چین اپنی فضائیہ کی طاقت بڑھانے کی کوشش کررہا ہے ، ایل اے سی پر ہندوستانی فضائیہ نے پہلے سے ہی اپنے ایم آئی 17 وی 5 کو تعینات کر رکھا ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 19, 2021 11:57 PM IST