جموں وکشمیر: فاروق عبداللہ کی بہن اور بیٹی کو کیا گیا رہا، ملی ضمانت

مرکزی حکومت کے ذریعہ گزشتہ پانچ اگست کو جموں وکشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آئین کے آرٹیکل 370 کے التزامات کو منسوخ کرنے اور ریاست کو مرکز کے زیر انتظام دو خطوں میں بانٹنے کے فیصلے کے خلاف ان لوگوں نے احتجاج کیا تھا۔

Oct 17, 2019 12:49 PM IST | Updated on: Oct 17, 2019 12:50 PM IST
جموں وکشمیر: فاروق عبداللہ کی بہن اور بیٹی کو کیا گیا رہا، ملی ضمانت

فاروق عبداللہ کی بہن اور بیٹی کو کیا گیا رہا

کشمیر۔ جموں وکشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ اور نیشنل کانفرنس کے صدر فاروق عبداللہ کی بہن اور ان کی بیٹی کو ضمانت پر رہا کر دیا گیا ہے۔ فاروق عبداللہ کی بہن ثریا اور ان کی بیٹی شافیہ کے ساتھ باقی سبھی خواتین کو بدھ کی رات ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔ ان لوگوں کو منگل کے روز سری نگر کے لال چوک پر آرٹیکل 370 کے خلاف احتجاج کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔

یہ تھا پورا معاملہ

Loading...

مرکزی حکومت کے ذریعہ گزشتہ پانچ اگست کو جموں وکشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آئین کے آرٹیکل 370 کے التزامات کو منسوخ کرنے اور ریاست کو مرکز کے زیر انتظام دو خطوں میں بانٹنے کے فیصلے کے خلاف ان لوگوں نے احتجاج کیا تھا۔

ثریا اور شافیہ دونوں کو سری نگر کے لال چوک پر آرٹیکل 370 کے خلاف احتجاج کے دوران منگل کو حراست میں لیا گیا تھا۔ اس کے بعد پولیس نے ثریا اور شافیہ کو عدالتی حراست میں رکھا تھا۔

Loading...