உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اترپردیش: متھرا میں عصمت دری کرنے والے حیوان باپ کو ملی خطرناک سزا، واقعہ سن کر رہ جائیں گے حیران

    اترپردیش: متھرا میں عصمت دری کرنے والے حیوان باپ کو ملی خطرناک سزا، واقعہ سن کر رہ جائیں گے حیران

    اترپردیش: متھرا میں عصمت دری کرنے والے حیوان باپ کو ملی خطرناک سزا، واقعہ سن کر رہ جائیں گے حیران

    اترپردیش میں متھر کی ا یک عدالت نے بیٹی کی عصمت دری کے الزام میں وحشی باپ کو بالآخر عمر قید کی سزا کا حکم دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس کو دو لاکھ روپئے کا جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      متھرا: اترپردیش میں متھر کی ا یک عدالت نے بیٹی کی عصمت دری کے الزام میں وحشی باپ کو بالآخر عمر قید کی سزا کا حکم دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس کو دو لاکھ روپئے کا جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔ استغاثہ کے مطابق شوہر کے انتقال کے چار سال بعد بچوں کی بہتر پرورش کے لئے متھرا کی نجمہ نامی خاتون نے علی گڑھ کے شوبی سے شادی کرلی تھی۔ شوبی خاتون کے پہلے شوہر کی 15 سالہ بیٹی سمیت ضلع کے سُسیر تھانہ علاقہ کے گاؤں کراہری میں رہنے لگا۔ دو فروری 2013 کو شام تقریباً 6 بجے جب نجمہ اپنے کسی رشتے دار کے یہاں گئی تھی تو شوبی نے لڑکی کو اغوا کرلیا اور وہ گھر کی موٹر سائیکل، ایک لاکھ 5 ہزار نقد اور سونے چاندی کے زیور بھی اپنے ساتھ لے گیا۔ اس نے لڑکی کی عصمت دری بھی کی۔
      نجمہ نے اپنی بیٹی کے اغوا اور عصمت دری کی شکایت سسیر تھانہ میں 15 فروری 2013 کو دفعہ 363، 366، 376 آئی پی ایس کے تحت کرائی تھی۔ ڈسٹرکٹ ایڈیشنل سرکاری وکیل (اے ڈی جی سی) سبھاش چندر چترویدی نے بتایا کہ جب اس کیس میں سزا کا نمبر آیا، تو دفاع کے وکیل نے کہا کہ چونکہ اس کا موکل بہت غریب ہے اور اس کا یہ جرم پہلا ہے، اس لئے اسے ہلکی سزا دی جانی چاہئے۔ سبھاش چندر چترویدی نے بتایا کہ اس کے برعکس، اس نے عدالت سے ملزم کو سخت سے سخت سزا دینے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ چونکہ ایک باپ نے اپنی بیٹی کے ساتھ زیادتی کرکے محافظ ہوکر بڑا سلوک کیا ہے اور چونکہ متاثرہ کی عمر 16 سال سے کم ہے، اس لئے ملزم کو سخت ترین سزا دی جانی چاہئے۔


      اترپردیش میں متھر کی ا یک عدالت نے بیٹی کی عصمت دری کے الزام میں وحشی باپ کو بالآخر عمر قید کی سزا کا حکم دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس کو دو لاکھ روپئے کا جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔
      اترپردیش میں متھر کی ا یک عدالت نے بیٹی کی عصمت دری کے الزام میں وحشی باپ کو بالآخر عمر قید کی سزا کا حکم دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس کو دو لاکھ روپئے کا جرمانہ ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے۔



      اے ڈی جی سی کے مطابق، جج امر سنگھ نے ملزم شوبی کو دفعہ 366 آئی پی سی کے جرم کے تحت 10 سال کی سخت قید اور 50 ہزار روپئے جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا اور دفعہ 378 کے تحت عصمت دری کے جرم میں عمر قید (آخری سانس تک) کی سزا بھگتنے اور ڈیڑھ لاکھ جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا گیا۔ دونوں سزائیں ساتھ ساتھ چلیں گی۔ حکم میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اگر ملزم دو لاکھ جمع نہیں کرتا تو حکومت متاثرہ کو دو لاکھ معاوضے کے طور پر دے گی۔ حکم میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ چونکہ ملزم ضمانت پر ہے، اس لئے اس کی ضمانت منسوخ کی جاتی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: