جے این یو کی سابق طلبہ لیڈر شہلا رشید کے خلاف غداری کا کیس درج ، فوج پر لگائے تھے جھوٹے الزامات

شہلا رشید نے 18اگست کو کئی ٹویٹ کئے تھے ، جس میں شہلا نے فوج پر کشمیریوں کے اوپر ظلم کرنے کا الزام لگایاتھا ۔ تاہم فوج نے ان الزامات کو جھوٹا قرار دیاتھا ۔

Sep 06, 2019 05:17 PM IST | Updated on: Sep 06, 2019 05:17 PM IST
جے این یو کی سابق طلبہ لیڈر شہلا رشید کے خلاف غداری کا کیس درج ، فوج پر لگائے تھے جھوٹے الزامات

شہلا رشید کے خلاف غداری کا کیس درج ، فوج پر لگائے تھے جھوٹے الزامات

دہلی پولیس نے فوج کے خلاف جھوٹے بیان دینے کے الزام میں جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو)کی سابق طالبہ شہلا رشید کے خلاف جمعہ کو ملک سے بغاوت کا معاملہ درج کیا۔ شہلا رشید نے 18اگست کو کئی ٹویٹ کئے تھے ، جس میں شہلا نے فوج پر کشمیریوں کے اوپر ظلم کرنے کا الزام لگایاتھا ۔ تاہم فوج نے ان الزامات کو جھوٹا قرار دیاتھا ۔ فوج نے شہلا رشید کے الزامات کو جموں و کشمیر کے حالات کے سلسلے میں لگائے گئے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہیں ’بے بنیاد‘ بتایا تھا۔

دہلی پولیس کی خصوصی برانچ نے آج شہلا کے خلاف ملک سے بغاوت کا معاملہ درج کیا۔ شہلا کے خلاف مجرمانہ شکایت کرنے والے سپریم کورٹ کے وکیل الکھ آلوک شریواستو نے یہاں نامہ نگاروں سے بات چیت میں کہا کہ شہلا کے ٹویٹ پوری طرح جھوٹے تھے ، ٹویٹ میں کسی کا نام اور کوئی ثبوت نہیں دیاگیا تھا ، بین الاقوامی میڈیا نے اس کے ٹویٹوں کا حوالہ دیا ہے جس سے ملک کا وقار متاثر ہوا۔ میں دہلی پولیس کے معاملہ درج کرنے سے مطمئن ہوں۔

شہلا رشید کے خلاف شکایت تین ستمبر کو تعزیرات ہند کی دفعہ 124اے،153 اے،153،504اور 505کے تحت درج کی گئی ۔ شریواستو نے اپنی شکایت میں فوج اور مرکزی حکومت کے خلاف جھوٹی خبریں پھیلانے کیلئے شہلا رشید کو گرفتار کئے جانے کا مطالبہ کیاتھا ۔

Loading...