ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دہلی:فائرنگ کرنےوالے شاہ رخ پرمقدمہ درج،پولیس کررہی ہے پوچھ تاچھ،اہم انکشاف کی امید

دہلی تشدد کے بعد پولیس مسلسل کارروائی کررہی ہے۔ اب تک 1،647 افراد کو پولیس نے تشدد کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔

  • Share this:
دہلی:فائرنگ کرنےوالے شاہ رخ پرمقدمہ درج،پولیس کررہی ہے پوچھ تاچھ،اہم انکشاف کی امید
شاہ رخ کے خلاف قتل کی کوشش کی شکایت درج

دہلی پولیس کے ہیڈ کانسٹیبل دیپک دہیہ نے شاہ رخ کے خلاف قتل کی کوشش کی شکایت درج کرائی ہے۔ دہلی تشددمیں آٹھ راؤنڈگولیاں چلانےوالے شاہ رخ کے خلاف دیپک دہیہ کی شکایت پر پولیس نے ایف آئی آر درج کرلی ہے۔حال ہی میں ، جب دہلی میں تشددپھوٹ پڑنے کے بعد اطلاع ملنے پر، دہلی پولیس موج پور کے علاقے میں شرپسندوں سے نمٹنے کے لئے پہنچی تھی۔ اس دوران ملزم شاہ رخ نے پولیس اہلکار دیپک دہیہ پر سرعام پستول کی تان دی تھی۔ ہیڈ کانسٹیبل دیپک دہیہ کی بہادری کی سب ستائش کررہے ہیں ۔جنہوں نے شرپسندوں کے ہجوم میں پستول تانے شاہ رخ کا سامنا ایک معمولی چھڑی سےکیا تھا۔


شاہ رخ نے موج پور میں پولیس کے سامنے 3 گولیاں چلائیں


دہلی میں سی اے اے اور این آر سی کے مخالف احتجاج کے دوران تشدد کے واقعات پیش آئے تھے۔آٹھ دنوں کی جدوجہد کے بعد پولیس پر فائرنگ کرنے والے شاہ رخ کو پولیس نے یوپی کے شاملی ضلع سے گرفتار کیا ہے۔ دہلی کے موج پور میں پولیس کے سامنے ملزم نوجوان شاہ رخ نے 3 گولیاں چلائیں۔ اگرچہ شاہ رخ کے پاس 5 کارتوس تھے۔ پولیس نے یہ بھی بتایا کہ ملزم سے برآمد شدہ نیم خودکار پستول منگر میں بنایاگیاتھا۔ پولیس پستول برآمد کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ شاہ رخ کو پہلے ہی 4 دن کے لئے پولیس تحویل میں بھیج دیا گیا ہے۔ پولیس اس سے پوچھ تاچھ کررہی ہے۔ گرفتاری کے بعد پولیس نے ملزم کو عدالت میں پیش کیا۔


طاہر حسین کے خلاف ایک مقدمہ درج

جبکہ دہلی تشدد کیس میں ایک اور ایف آئی آر مقامی کونسلر طاہر حسین کے نام پر درج کی گئی ہے۔ ایک اور ایف آئی آر شمال مشرقی ضلع کے دیالپور تھانے میں حسین کے خلاف درج کی گئی ہے۔ تھانہ کھجوری خاص میں درج ایف آئی آر میں طاہر حسین کا نام بھی شامل ہے۔ اب تک ، طاہر حسین کے خلاف مجموعی طور پر 3 مقدمات درج ہیں۔

دہلی میں 1647افراد کو کیاگیا گرفتار: پولیس

دہلی تشدد کے بعد پولیس مسلسل کارروائی کررہی ہے۔ اب تک 1،647 افراد کو پولیس نے تشدد کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔ قومی دارالحکومت کے شمال مشرقی علاقے میں تشدد کے واقعات کے بعد اب تک 531 مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ ان میں آرمس ایکٹ کے 47 مقدمات شامل ہیں۔ اہم بات یہ ہے کہ یہ تشدد شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کی حمایت اور مخالفت کے دوران پھوٹ پڑا۔ اس کے بعد ، علاقے میں امن کی بحالی کے لئے کوششیں جاری ہیں۔
First published: Mar 05, 2020 08:43 AM IST