உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Manipur:منی پور میں نتیش کمار کی پارٹی جے ڈی یو کو لگا بڑا جھٹکا، پانچ ایم ایل اے بی جے پی میں ہوئے شامل

    نتیش کمار کو منی پور میں لگا بڑا جھٹکا۔ فائل فوٹو ۔

    نتیش کمار کو منی پور میں لگا بڑا جھٹکا۔ فائل فوٹو ۔

    نتیش کمار نے یہ بھی کہا کہ وہ وزیر اعظم کے عہدے کی دوڑ میں نہیں ہیں۔ مودی کے بیان کے تناظر میں انہوں نے یاد دلایا کہ وہ اٹل بہاری واجپائی حکومت کے دور حکومت میں مرکز میں تھے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Manipura, India
    • Share this:
      Manipur: منی پور میں بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار کی پارٹی جے ڈی یو کو بڑا جھٹکا لگا ہے۔ یہاں جنتا دل یونائٹیڈ (JDU) کے پانچ ارکان اسمبلی جمعہ کو برسراقتدار بھارتیہ جنتا پارٹی (BJP) میں شامل ہوگئے ہیں۔ منی پور اسمبلی کے سکریٹری میگھاجیت سنگھ کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ منی پور میں جے ڈی یو کے پانچ ارکان اسمبلی بی جے پی میں شامل ہوگئے ہیں۔ جے ڈی یو نے اس سال مارچ میں ہوئے اسمبلی الیکشن میں 38 میں سے چھ سیٹوں پر جیت حاصل کی تھی۔

      بی جے پی منی پور نے ٹویٹر پر ایک خط جاری کیا ہے جس میں جے ڈی یو ایم ایل اے کے نام شامل ہیں جو بی جے پی میں شامل ہوئے ہیں۔ بی جے پی میں شامل ہونے والے ایم ایل اے میں کے ایچ جوائی کشن، این سناتے، محمد اچھب الدین، سابق ڈائریکٹر جنرل آف پولیس اے ایم کھاوٹے اور تھانگ جام ارون کمار شامل ہیں۔

      اس سال مارچ میں ہوئے اسمبلی انتخابات میں جے ڈی (یو) نے 38 میں سے چھ سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔ کھاوٹے اور ارون کمار نے پہلے بی جے پی کے ٹکٹ پر اسمبلی انتخابات لڑنے کی کوشش کی تھی، لیکن بھگوا پارٹی کی طرف سے ان کی امیدواری سے انکار کرنے کے بعد وہ جے ڈی (یو) میں شامل ہو گئے تھے۔



      میں پی ایم کی دوڑ میں نہیں ہوں: نتیش کمار
      بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے جمعہ کو وزیر اعظم نریندر مودی کے’بدعنوانوں کو بچانے کے لئے پولرائزیشن‘ کے طعنے پر تنقید کی تھی۔انہوں نے کہاکہ میں ان کی باتوں پر توجہ نہیں دیتا۔ نتیش کمار نے یہ بھی کہا کہ وہ وزیر اعظم کے عہدے کی دوڑ میں نہیں ہیں۔ مودی کے بیان کے تناظر میں انہوں نے یاد دلایا کہ وہ اٹل بہاری واجپائی حکومت کے دور حکومت میں مرکز میں تھے۔

      یہ بھی پڑھیں:

      ’’مدارس کے تئیں مرکزی اور ریاستی حکومت کا متعصبانہ رویہ تشویشناک اور غیر آئینی‘‘ AIMPLB

      یہ بھی پڑھیں:
      WhatsApp: ہندوستان میں 23 لاکھ سے زائد واٹس ایپ اکاؤنٹس کو کیا گیا بلاک، آخرکیاہےوجہ؟

      بی جے پی سے اتحاد توڑنے کے بعد نتیش کے قومی سیاست میں آنے کی باتیں ہو رہی ہیں، لیکن انہوں نے پھر کہا کہ میں وزیر اعظم کے عہدے کی دوڑ میں نہیں ہوں۔ مرکز کی سیاست میں کردار کے بارے میں سوالوں کے جواب میں جے ڈی یو کے ہیڈکوارٹر میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے نتیش کمار نے کہا کہ یہ ساری باتیں چھوڑو۔ ساتھ ہی پارٹی ہیڈکوارٹر پر لگائے گئے کچھ بڑے پوسٹروں پر 'پردیش میں دکھا، دیش میں دکھے گا' لکھا ہوا ہے۔ان سے کئی معنی نکالے جا رہے ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: