உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Ganja Smuggling: گانجہ اسمگلنگ کیس میں پانچ گرفتار، منشیات کو وشاکھاپٹنم سے مدھیہ پردیش بھیجنے کا الزام

    فائل فوٹو

    فائل فوٹو

    ویزاگ میں اسپیشل انفورسمنٹ بیورو (SEB) کے جوائنٹ ڈائرکٹر ایس ستیش کمار نے کہا کہ مصدقہ اطلاعات کی بنیاد پر سری نواسا راؤ کو گرفتار کیا گیا اور 21 نومبر کو شہر کے کنچرا پلیم میں کرائے کے مکان میں ذخیرہ شدہ 48 کلو گرام خشک گانجہ کو ضبط کیا گیا ہے۔

    • Share this:
      وشاکھاپٹنم: ای کامرس پلیٹ فارم پر بھنگ کی تجارت کے سلسلے میں وشاکھاپٹنم (VISAKHAPATNAM) میں باپ بیٹے کی جوڑی سمیت پانچ افراد کو گرفتار کیا گیا۔ اطلاع کے مطابق ملزم شہر سے منشیات مدھیہ پردیش بھیجتا تھا۔

      گرفتار شدگان کی شناخت چودھری سرینواس راؤ، جے کمارسوامی، بی کرشنم راجو، چودھری وینکٹیشور راؤ اور سری نواس راؤ کے بیٹے چودھری موہن راجو عرف راکھی کے طور پر کی گئی ہے۔ یاد رہے کہ مدھیہ پردیش میں بھنڈ پولیس نے آن لائن بھنگ کے ریکیٹ کا پردہ فاش کیا تھا، جس کے نتیجے میں تین نوجوانوں کو گرفتار کیا گیا تھا اور 20 کلو سے زیادہ خشک گانجہ ضبط کیا گیا تھا۔

      ویزاگ میں اسپیشل انفورسمنٹ بیورو (SEB) کے جوائنٹ ڈائرکٹر ایس ستیش کمار نے کہا کہ مصدقہ اطلاعات کی بنیاد پر سری نواسا راؤ کو گرفتار کیا گیا اور 21 نومبر کو شہر کے کنچرا پلیم میں کرائے کے مکان میں ذخیرہ شدہ 48 کلو گرام خشک گانجہ کو ضبط کیا گیا ہے۔

      ستیش نے کہا کہ گانجے کے علاوہ پیکنگ کا سامان جیسے کور، گتے کے ڈبے، ٹیپ اور ایک الیکٹرانک وزنی مشین بھی گھر سے ملی ہے۔ تحقیقات سے پتہ چلا کہ سری نواسا راؤ نے مدھیہ پردیش کے سورج پاویا اور مکل جیسوال سے واقفیت حاصل کی، جو ایک ای کامرس سائٹ پر وینڈر کے طور پر رجسٹرڈ تھے۔

      پاویا اور جیسوال نے دوسری فرموں کے جی ایس ٹی نمبروں کا استعمال کرتے ہوئے ایک فرم 'بابو ٹیکس' بنائی اور ای کامرس سائٹ کے ساتھ خود کو وینڈرز کے طور پر رجسٹر کیا اور ویزاگ شہر سے مدھیہ پردیش کو بھنگ سپلائی کی۔

      ستیش کمار نے کہا کہ ’’ہم نے دو ساتھیوں کمارسوامی اور کرشنم راجو اور ایک وین ڈرائیور وینکٹیشور راؤ کو بھی گرفتار کیا ہے۔ انھوں نے کنچرا پلیم میں ملزم سرینواس راؤ کی مدد کی۔ ہماری تحقیقات سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ سری نواس راؤ کا بیٹا موہن راجو غیر قانونی تجارت میں ملوث تھا، اس لیے اسے بھی گرفتار کیا گیا۔ ہمیں شبہ ہے کہ گزشتہ آٹھ مہینوں میں ای کامرس سائٹ کے ذریعے پاویا اور جیسوال نے 600 سے 700 کلو گرام خشک گانجہ ویزاگ سے مدھیہ پردیش منتقل کیا تھا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: