உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گینگسٹر وکاس دوبےکی ہلاکت پر عمر عبداللہ کا تبصرہ، کہہ دی یہ بڑی بات

    نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے شوپیاں مبینہ فرضی تصادم میں مارے جانے والے راجوری کے تین مزدوروں کی بارہمولہ میں دفن کی جانے والی لاشوں کو لواحقین کے سپرد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

    نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے شوپیاں مبینہ فرضی تصادم میں مارے جانے والے راجوری کے تین مزدوروں کی بارہمولہ میں دفن کی جانے والی لاشوں کو لواحقین کے سپرد کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

    نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے اترپردیش کےکانپور میں ایک ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس سمیت 8 پولیس اہلکاروں کو انتہائی بے رحمی کے ساتھ قتل کرنے والے ملزم گینگسٹر وکاس دوبے کی جمعہ کی صبح ایک پولیس مقابلے میں ہلاکت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ 'مرے ہوئے لوگ کوئی کہانی نہیں سناتے ہیں'۔

    • Share this:
      سری نگر: نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے اترپردیش کے کانپور میں ایک ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس سمیت 8 پولیس اہلکاروں کو انتہائی بے رحمی کے ساتھ قتل کرنے والے ملزم گینگسٹر وکاس دوبے کی جمعہ کی صبح ایک پولیس مقابلے میں ہلاکت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ 'مرے ہوئے لوگ کوئی کہانی نہیں سناتے ہیں'۔ ان کا بظاہر کہنا تھا کہ وکاس دوبے کئی بڑے لوگوں کے راز جانتے تھے اور ان کی ہلاکت کے ساتھ وہ راز بھی دفن ہوگئے ہیں۔

      عمر عبداللہ نے 'وکاس دوبے' کا ہیش ٹیگ استعمال کرتے ہوئے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا: 'مرے ہوئے لوگ کوئی کہانی نہیں سناتے ہیں'۔ جموں وکشمیر پولیس کے سابق سربراہ ڈاکٹر شیش پال وید نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ اترپردیش کی پولیس کریڈٹ کی مستحق ہے کیونکہ اس نے وکاس دوبے کو فرار ہونے میں کامیاب نہیں ہونے دیا۔ ان کا ٹویٹ میں کہنا تھا: 'یو پی پولیس کے مطابق بدنام زمانہ مجرم اور کانپور یو پی کے گینگسٹر وکاس دوبے کو جمعہ کی صبح ایک تصادم میں مارا گیا۔ یو پی پولیس جس نے وکاس کو فرار ہونے میں کامیاب نہیں ہونے دیا، کریڈٹ کی مستحق ہے۔ اس کا فرار ہونا خطرناک ثابت ہوتا۔ سیاستدانوں – مجرموں – پولیس کے درمیان ساز باز سے پردہ اٹھانے کی ضرورت ہے'۔

      عمر عبداللہ کا بظاہر کہنا تھا کہ وکاس دوبے کئی بڑے لوگوں کے راز جانتے تھے اور ان کی ہلاکت کے ساتھ وہ راز بھی دفن ہوگئے ہیں۔
      عمر عبداللہ کا بظاہر کہنا تھا کہ وکاس دوبے کئی بڑے لوگوں کے راز جانتے تھے اور ان کی ہلاکت کے ساتھ وہ راز بھی دفن ہوگئے ہیں۔


      واضح رہےکہ کانپور میں 8 پولیس اہلکاروں کو قتل کرنے کے کیلدی ملزم وکاس دوبے جمعہ کی صبح بھونتی علاقے کے قریب پولیس مقابلے میں مارے گئے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: