ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سابق رکن پارلیمنٹ عتیق احمد اور ان کے بھائی اشرف پرکسا پولیس کا شکنجہ

سماج وادی پارٹی کے سابق ایم ایل اے خالد عظیم عرف اشرف کو پولیس نےگرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے۔ خالد عظیم اشرف پر بہوجن سماج پارٹی کے ایم ایل اے راجو پال کے قتل سمیت گینگسٹر کےکئی سنگین مقدمات درج ہیں۔

  • Share this:
سابق رکن پارلیمنٹ عتیق احمد اور ان کے بھائی اشرف پرکسا پولیس کا شکنجہ
سابق رکن پارلیمنٹ عتیق احمد اور ان کے بھائی اشرف پرکسا پولیس کا شکنجہ

الہ آباد: کانپور میں مافیا وکاس دوبے کی طرف سے پولیس ٹیم پر حملےکے بعد یوگی حکومت نے مشرقی یو پی میں اپنا سیاسی اثرو رسوخ   رکھنے والے  سماج وادی پارٹی کے سابق ممبر پارلیمنٹ عتیق احمد اور ان کے قریبی رشتہ داروں  پر شکنجہ کسنا شروع کر دیا ہے۔ کافی عرصے سے پولیس کی گرفت سے فرار چل رہے عتیق احمد کے  چھوٹےبھائی اور سماج وادی پارٹی کے سابق ایم ایل اے خالد عظیم عرف اشرف کو پولیس نےگرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے۔ خالد عظیم اشرف پر بہوجن سماج پارٹی کے ایم ایل اے راجو پال کے قتل سمیت گینگسٹر کےکئی سنگین  مقدمات درج  ہیں۔ اس کے علاوہ پولیس نے سابق رکن پارلیمنٹ عتیق احمد  کے گینگ سے تعلق رکھنے والے کئی افراد کے  گھروں  پر چھاپے ماری کی بھی کار روائی کی ہے۔


واضح رہے کہ یوگی حکومت نے  ریاست کے 33 بڑے مافیاؤں کی فہرست  تیار کی ہے۔ اس لسٹ میں الہ آباد کے عتیق احمدکا نام سر فہرست ہے۔ عتیق احمد  الہ آباد مغربی حلقے سے پانچ مرتبہ ایم ایل اے اور پھول پور پارلیمانی حلقے سے رکن پارلیمنٹ رہ چکے ہیں۔ عتیق احمد اور ان کے بھائی کا شمار سماج وادی پارٹی کے اثر دار لیڈروں میں ہوتا ہے۔ عتیق احمد مختلف مقدمات کے تحت ان دنوں گجرات کی احمد آباد سینٹرل جیل میں بند ہیں جبکہ ان کے بھائی خالد عظیم عرف اشرف کو گرفتار کرنے کے بعد نینی جیل سینٹرل  بھیج دیا  گیا ہے۔


کافی عرصے سے پولیس کی گرفت سے فرار چل رہے عتیق احمد کے چھوٹےبھائی اور سماج وادی پارٹی کے سابق ایم ایل اے خالد عظیم عرف اشرف کو پولیس نےگرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے۔
کافی عرصے سے پولیس کی گرفت سے فرار چل رہے عتیق احمد کے چھوٹےبھائی اور سماج وادی پارٹی کے سابق ایم ایل اے خالد عظیم عرف اشرف کو پولیس نےگرفتار کرکے جیل بھیج دیا ہے۔


الہ آباد کے انسپکٹر جنرل آف پولیس کوندر پرتاپ سنگھ کا کہنا ہے کہ پولیس نے عتیق احمد گینگ کے علاوہ علاقے میں سر گرم دوسرے مافیاؤں پر بھی شکنجہ کسنے کی تیار کر لی ہے۔ یوگی حکومت نے الہ آباد کے جن بڑے مافیاؤں اور ان کے گینگ کےخلاف کار روائی کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔ ان میں سماج وادی پارٹی کے سابق لیڈر دلیپ مشرا، بہوجن سماج پارٹی کے لیڈر بچہ پاسی اور راجیش یادو کے نام شامل ہیں۔ آئی جی کوندر پرتاپ سنگھ کا کہنا ہےکہ جو جرائم پیشہ افراد ضمانت پر رہا ہوئے ہیں عدالتوں سے ان کی ضمانتیں  منسوخ کروا کر ان کو جیل بھیجنے کی تیاری کی جا رہی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ضمانت پر جیل سے رہا ہونے والے جرائم پیشہ افراد سنگین قسم کی وار داتوں میں ملوث پائے گئے ہیں، لہٰذا ان کے خلاف سخت قانونی کار روائی ہونا بہت ضروری ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Jul 07, 2020 08:05 PM IST