உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا 84 سال کی عمر میں انتقال ، 7 دنوں کے قومی سوگ کا اعلان

    سابق صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی کا انتقال ، بیٹے نے ٹویٹ کرکے کی تصدیق

    ملک کے سابق صدر پرنب مکھرجی کا پیر کو انتقال ہوگیا ہے۔ ان کے بیٹے ابھیجیت مکھرجی نے ٹویٹ کرکے سابق صدر کے انتقال کی تصدیق کی ہے۔ پرنب مکھرجی طویل عرصہ سے بیمار چل رہے تھے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: سابق صدر جمہوریہ اور کانگریس کے سینئر رہنما پرنب مکھرجی (Pranab Mukherjee) کا انتقال ہوگیا ہے۔ ان کے انتقال سے ہر طرف غم کی لہر دوڑ گئی ۔ حکومت نے سات دنوں کے قومی سوگ کا اعلان کیا ہے ۔ خیال رہے کہ پرنب مکھرجی دہلی کے آرمی اسپتال میں ایڈمٹ تھے، جہاں ان کی حالت کئی دنوں سے نازک بنی ہوئی تھی۔ پرنب مکھرجی کے بیٹے ابھیجیت مکھرجی نے ٹویٹ کرکے سابق صدر کے انتقال کی تصدیق کی ہے۔ پرنب مکھرجی طویل عرصہ سے بیمار چل رہے تھے اور کورونا سے متاثر پائے گئے تھے۔ 10 اگست کو سابق صدر جمہوریہ پرنب دا نے خود ہی ٹوئٹ کرکے کورونا سے متاثر ہونے کی اطلاع دی تھی۔ وہیں دوسری جانب اسپتال کی جانب سے بھی ہیلتھ اپڈیٹ مسلسل جاری کی جارہی تھی۔ پرنب مکھرجی کی حالت نازک ہونے کی خبر آنے کے بعد صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند نے پرنب مکھرجی کی خیریت دریافت کرنے کے لئے ان کی بیٹی شرمشٹھا مکھرجی کو فون کیا تھا۔

      پرنب مکھرجی کے انتقال پر صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے ٹوئٹ کرکے خراج عقیدت پیش کیا۔ رام ناتھ کووند نے ٹوئٹ میں لکھا کہ پرنب مکھرجی کے انتقال کی خبر سن کر دکھ ہوا۔ ان کا جانا ایک عہد کا خاتمہ ہے۔ پرنب مکھرجی نے ملک کی خدمت کی، آج ان کے جانے پر پورا ملک دکھی ہے۔




      اسپتال (R & R) دہلی کینٹ میں داخل کرایا گیا تھا۔ اسپتال میں جانچ کے دوران دماغ میں خون جمنے کی بات سامنے آئی اور اس کے بعد ان کی سرجری ہوئی۔ سرجری کے بعد وہ وینٹیلیٹر پر ہیں، ان کی حالت اب بھی سنگین ہے اور وہ کورونا پازیٹیو پائے گئے ہیں’۔ اس سے پہلے 84 سالہ پرنب مکھرجی نے ٹوئٹ کیا، ’دیگر وجوہات سے اسپتال گیا تھا، جہاں پر آج کووڈ-19 جانچ میں پازیٹیو ہونے کی تصدیق ہوئی’۔ کانگریس کے سینئر لیڈر اور سال 2012 سے 2017 تک ملک کے صدر جمہوریہ رہے پرنب مکھرجی نے ٹوئٹ میں کہا، ’میں گزارش کرتا ہوں کہ جو لوگ گزشتہ ایک ہفتےمیں میرے رابطے میں آئے ہیں، وہ خود آئیسولیشن میں چلے جائیں اور اپنی کووڈ-19 جانچ کرائیں۔

      2012 میں بنے تھے ملک کے صدر جمہوریہ

      پرنب مکھرجی نے جولائی2012 میں ہندوستان کے 13 ویں صدر جمہوریہ کے طور پر حلف لی تھی۔ وہ 25 جولائی 2017 تک اس عہدے 2017 تک اس عہدے پر رہے تھے۔ پرنب مکھرجی کو 26 جنوری 2019 میں بھارت رتن سے سرفراز کیا گیا تھا۔ پرنب مکھرجی نے کولکاتا یونیورسٹی سے تاریخ اور پولیٹیکل سائنس میں پوسٹ گریجویشن کے ساتھ ساتھ قانون کی ڈگری حاصل کی تھی۔ وہ ایک وکیل اور کالج کے استاد بھی رہے اور انہیں اعزازی ڈی لٹ کی ڈگری بھی دی گئی۔ پرنب مکھرجی نے پہلے ایک کالج ٹیچر کے طور پر اور بعد میں بطور صحافی اپنا کیریئر شروع کیا۔ 11 دسمبر 1935، کو مغربی بنگال کے ویر بھوم ضلع میں پرنب مکھرجی پیدا ہوئے تھے۔ ان کے والد 1920 سے ہی کانگریس پارٹی میں سرگرم تھے۔ پرنب مکھرجی کے والد عظیم مجاہد آزادی تھے، جنہوں نے انگریز حکومت کے خلاف تحریک چلانے کی بنا پر 10 سال سے زیادہ تک جیل کی سزا بھی کاٹی تھی۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: