உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Karnataka: عید گاہ میدان میں گنیش پوجا کے اعلان سے تنازعہ، 1600 پولیس اہلکار موجود

    Karnataka: عید گاہ میدان میں گنیش پوجا کے اعلان سے تنازعہ، 1600 پولیس اہلکار موجود

    Karnataka: عید گاہ میدان میں گنیش پوجا کے اعلان سے تنازعہ، 1600 پولیس اہلکار موجود

    کرناٹک کی راجدھانی بنگلور کے عیدگاہ میدان میں گنیش پوجا کی اجازت دینے پر بڑا تنازعہ کھڑا ہوگیا ہے۔ تازہ جانکاری کے مطابق، معاملے کو سنبھالنے کے لئے میدان کے چاروں طرف چپے چپے پر بھاری تعداد میں پولیس کی تعیناتی کی گئی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Karnataka, India
    • Share this:
      بنگلورو: کرناٹک کی راجدھانی بنگلور کے عیدگاہ میدان میں گنیش پوجا کی اجازت دینے پر بڑا تنازعہ کھڑا ہوگیا ہے۔ تازہ جانکاری کے مطابق، معاملے کو سنبھالنے کے لئے میدان کے چاروں طرف چپے چپے پر بھاری تعداد میں پولیس کی تعیناتی کی گئی ہے۔ وہیں، اس درمیان ریاست کے وقف بورڈ اس کے خلاف سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے، جہاں کچھ دیر میں سماعت شروع ہو جائے گی۔

      سینئر وکیل کپل سبل نے فوری سماعت کے لئے معاملے کا ذکر کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہائی کورٹ کے حکم سے غیر ضروری کشیدگی پیدا ہوگی۔ واضح رہے کہ کرناٹک ہائی کورٹ کی ڈویژن بینچ نے کرناٹک حکومت کو چامراج پیٹ میں عید گاہ میدان کے استعمال کا مطالبہ کرنے والی درخواستوں پر غور کرنے اور مناسب گائیڈ لائن جاری کرنے کی اجازت دے دی تھی۔

      1600 پولیس اہلکاروں کی تعیناتی: ڈی سی پی

      عید گاہ میدان کے پاس کئے گئے سیکورٹی انتظامات پر ڈی سی پی لکشمن بی نمبارگی (مغربی ڈویژن) نے کہا کہ گزشتہ 15 دنوں سے بدمعاشوں پر کارروائی کی جا رہی ہے۔ ہم لا اینڈ آرڈر کو یقینی بنا رہے ہیں۔ گنیش چترتھی کی زمین پر بھی ہم نے سبھی طبقوں کے لیڈران کے ساتھ امن سے متعلق میٹنگ کی۔ ہم نے چامراج پیٹ میں تقریباً 1600 پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا ہے۔ اس کے علاوہ تین DCP، 21 ACP تقریباً 49 انسپکٹر، 130 پی ایس آئی اور ریپڈ ایکشن فورس (RAF) کو بھی امن اور ہم آہنگی کو یقینی بنانے کے لیے تعینات کیا گیا ہے۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: