جموں وکشمیرکےگورنرنے کہا- فرقہ وارانہ ہم آہنگی اوربھائی چارہ کومزید مضبوط کرے گا عیدالاضحیٰ کا تیوہار

جموں وکشمیرکے گورنرستیہ پال نے اتوار کولوگوں کو عیدالاضحیٰ کی مبارکباد دیتے ہوئے ان کی بھلائی اورخوشحالی کی دعا کی۔

Aug 11, 2019 09:01 PM IST | Updated on: Aug 11, 2019 09:01 PM IST
جموں وکشمیرکےگورنرنے کہا- فرقہ وارانہ ہم آہنگی اوربھائی چارہ کومزید مضبوط کرے گا عیدالاضحیٰ کا تیوہار

جموں وکشمیرکےگورنرستیہ پال ملک نے لوگوں کوعیدالاضحیٰ کی مبارکباد دیتے ہوئے ان کی خوشحال اورسلامتی کی دعا کی ہے۔

جموں وکشمیرکے گورنرستیہ پال نے اتوار کولوگوں کو عیدالاضحیٰ کی مبارکباد دیتے ہوئے ان کی بھلائی اورخوشحالی کی دعا کی۔ گورنرنے اپنے پیغام میں کہا کہ انہیں امید ہے کہ یہ تیوہارفرقہ وارانہ ہم آہنگی ، بھائی چارہ اورمیل جول کواورزیادہ مضبوط کرے گا۔ ساتھ ہی جموں وکشمیرکے اس شاندار تکثیری اخلاقیات کو زندہ کرے گا، جس کے لئے وہ صدیوں سے جانا جاتا ہے۔ گورنرنے اپنے مبارکبادی پیغام میں جموں وکشمیرمیں امن، ترقی اور خوشحالی کی مبارکباد پیش کی۔

ریاست میں کھلیں دوکانیں

Loading...

مرکزی حکومت نے پیرکو عیدالاضحیٰ سے پہلے جموں وکشمیرمیں سیکورٹی کنٹرول میں نرمی کے ساتھ ریاستی انتظامیہ نے بھی ریاستی ملازمین کے ساتھ عام لوگوں کے لئے امداد کا اعلان کیا ہے۔ ریاستی انتظامیہ نے ایک پریس ریلیز جاری کرکے کہا ہے کہ ریاست میں عیدالاضحیٰ کی تیاریاں عام طورپرچل رہی ہیں اوربکرے اورمرغے کی دوکانیں اتوارکو کھلی ہیں اوران کے باہرطویل قطاریں نظرآرہی ہین۔

جاری ہوا ہیلپ لائن نمبر

سری نگرواقع سی آرپی ایف ہیلپ لائن نے اتوارکو لوگوں کے لئے نیا ہیلپ لائن نمبر جاری کیا۔ یہ نمبرخاص کرکشمیرکے ان لوگوں کے لئے ہے، جنہیں اپنی فیملی کے لئے مدد چاہئے یا جموں وکشمیرسے دفعہ 370  کے شقوں کوختم کئے جانے کے بعد جو مشکل میں ہیں۔

وزیرداخلہ بولے ختم ہوگی دہشت گردی

وہیں مرکزی وزیرامت شاہ نے اتوارکونائب صدرایم وینکیا نائیڈو کی کتاب کے اجرا کے موقع پرکہا کہ آئین کے دفعہ 370 کے تحت جموں وکشمیرکوملنے والی خصوصی ریاست کے درجے کوختم کرنے سےعلاقے میں دہشت گردی کا خاتمہ ہوگا اوروہ ترقی کے راستے پر گامزن ہوکرنئے راستے کھلیں گے۔

جموں وکشمیرکے سروے میں سامنے آئی یہ بات

واضح رہے کہ جموں وکشمیراورلداخ کےالگ الگ مرکزکے زیرانتظام خطہ بنائے جانے کے بعد سی این این - نیوز18 نے سروے کیا ہے۔ اس سروے میں سامنے آیا ہے کہ بیشترلوگ اس فیصلے سے خوش ہیں۔ وہ سبھی فیصلے کا استقبال کررہے ہیں۔ وہیں جموں وکشمیرکے نوجوانوں کا ماننا ہے کہ اب انہیں روزگارکے مزید مناسب مواقع ملیں گے۔ لداخ ڈویژن میں لوگوں نےاس فیصلے کا استقبال کیا ہے۔

Loading...