உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مرکزی حکومت کا بڑا قدم: ایپل اورگوگل کو پلے اسٹور سے ٹک ٹاک کو ہٹانے کی ہدایت

    ٹک ٹاک موبائل ایپ دراصل ویڈیو بنانے کا ایک ایپ ہے جسے نوجوانوں میں کافی مقبولیت ملی ہے اورملک میں 104 ملین صارفین اس کا استعمال کررہے ہیں

    ٹک ٹاک موبائل ایپ دراصل ویڈیو بنانے کا ایک ایپ ہے جسے نوجوانوں میں کافی مقبولیت ملی ہے اورملک میں 104 ملین صارفین اس کا استعمال کررہے ہیں

    ٹک ٹاک موبائل ایپ دراصل ویڈیو بنانے کا ایک ایپ ہے جسے نوجوانوں میں کافی مقبولیت ملی ہے اورملک میں 104 ملین صارفین اس کا استعمال کررہے ہیں

    • Share this:
      مرکزی حکومت نے ایپل اور گوگل کواپنے پلے اسٹور سے ٹک ٹاک موبائل ایپ کو ہٹانے کی ہدایت دی ہے۔ سپریم کورٹ نے ٹک ٹاک پرپابندی لگانے سے متعلق مدراس ہائی کورٹ کی مدورائی بنچ کے فیصلے پرروک لگانے سے انکارکردیا تھا جس کے بعد مرکزی حکومت نے ایپل اور گوگل کو پلے اسٹور سے ٹک ٹاک موبائل ایپ کو ہٹانے کی ہدایت دی ہے۔

      ٹک ٹاک موبائل ایپ دراصل ویڈیو بنانے کا ایک ایپ ہے جسے نوجوانوں میں کافی مقبولیت ملی ہے اورملک میں 104 ملین صارفین اس کا استعمال کررہے ہیں۔ ٹک ٹاک کی وباءان دنوں نوجوانوں میں پھیل رہی ہے۔ ٹک ٹاک کے ویڈیوز دیکھنے والوں کے ساتھ اس پرویڈیوزاپ لوڈ کرنے کا جنون بھی نوجوان نسل میں بڑھتا جارہا ہے۔ دو دن  پہلے ہی ٹک ٹاک پر ویڈیو بناتے ہوئے گولی چلنے سے ایک نوجوان کی موت ہوگئی تھی ۔

      واضح رہے کہ مدراس ہائی کورٹ کی ڈویژن بنچ نے ایک معاملہ کی سماعت کے دوران یہ ہدایت دی ۔جسٹس سندرنے کہا تھا کہ ٹک ٹاک پرغیراخلاقی اورغیرمہذب ویڈیوزپیش کئے جا رہے ہیں۔ کورٹ نے بتایا کہ انڈونیشیا اوربنگلہ دیش جیسے ممالک میں ٹک ٹاک پر پہلے سے ہی پابندی ہے اوروہیں امریکہ نے چلڈرن آن لائن پرائیویسی ایکٹ منظورکرلیا ہے۔

      اس لئے ہندوستان کواس سلسلہ میں ضروری اقدامات کرنے چاہئیں۔ عدالت نے مرکزی حکومت کو ٹک ٹاک کے ڈاؤن لوڈ پرپابندی لگانے کی ہدایت دی ہے۔ کورٹ کا ماننا ہے کہ اس موبائل ایپ کے ذریعہ پورنوگرافی عام ہورہی ہے اورنوجوان بالخصوص نابالغ بچے غیر اخلاقی سرگرمیوں کا شکارہو رہے ہیں۔ کورٹ نے اپنی ہدایت میں یہ بھی واضح کیا ہے کہ اس ایپ سے ملک کی سلامتی کو بھی خطرہ ہے۔

      واضح رہے کہ اس سے قبل تمل ناڈو حکومت نے بھی ٹک ٹاک پرپابندی لگانے کا اشارہ دیا تھا۔ چین میں بنایا گیا ٹک ٹاک ایپ ہندوستان میں بھی کافی مقبول ہے۔
      First published: