جموں وکشمیر: سری نگر میں گرینیڈ حملہ، ایک شہری جاں بحق اور 15 دیگر زخمی

عینی شاہدین کے مطابق نامعلوم دہشت گردوں نے پیر کو دوپہر کے وقت سری نگر کے قلب تاریخی لال چوک سے محض ڈیڑھ سو میٹر کی دوری پر واقع ہری سنگھ ہائی اسٹریٹ میں گونی کھن گلی کے نزدیک گرینیڈ پھینکا جس کے نتیجے میں کم از کم 15 افراد زخمی ہو گئے۔

Nov 04, 2019 02:45 PM IST | Updated on: Nov 04, 2019 03:41 PM IST
جموں وکشمیر: سری نگر میں گرینیڈ حملہ، ایک شہری جاں بحق اور 15 دیگر زخمی

سری نگر میں گرینیڈ حملہ، ایک شہری جاں بحق اور 15 دیگر زخمی

سری نگر۔ جموں وکشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر کے مصروف ترین تجارتی مرکز ہری سنگھ ہائی اسٹریٹ میں پیر کے روز ہونے والے ایک گرینیڈ حملے میں ایک شہری جاں بحق جبکہ کم از کم 15 دیگر زخمی ہوگئے۔12 اکتوبر کو اسی جگہ پر ہوئے ایک گرینیڈ حملے میں ایک خاتون سمیت 8 افراد زخمی ہوئے تھے۔

عینی شاہدین کے مطابق نامعلوم دہشت گردوں نے پیر کو دوپہر کے وقت سری نگر کے قلب تاریخی لال چوک سے محض ڈیڑھ سو میٹر کی دوری پر واقع ہری سنگھ ہائی اسٹریٹ میں گونی کھن گلی کے نزدیک گرینیڈ پھینکا جس کے نتیجے میں کم از کم 15 افراد زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ایک شہری کی موت واقع ہو گئی۔

گرینیڈ دھماکے کی وجہ سے سڑک پر کھڑی کچھ نجی گاڑیوں کے شیشے چکنا چور ہوئے اور متعدد دکانوں کو نقصان پہنچا۔ ریاستی پولیس نے گرینیڈ دھماکے کے لئے دہشت گردوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

Loading...

قابل ذکر ہے کہ یہ گرینیڈ حملہ اس وقت کیا گیا جب وادی کشمیر میں دفعہ 370 کی منسوخی اور ریاست کی دو حصوں میں تقسیم کے خلاف جاری ہڑتال 92 ویں دن میں داخل ہوگئی۔ تاہم پیر کے روز بھی اگرچہ وادی کے یمین و یسار میں بازار دن کے وقت بند ہی رہے تاہم صبح اور شام کے وقت بازار کھلے رہنے اور پبلک ٹرانسپورٹ کی جزوی بحالی سے معمولات زندگی قدرے بحال ہوتے ہوئے نظر آئے تھے۔

Loading...
Listen to the latest songs, only on JioSaavn.com