உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    الیکٹرک گاڑیوں کی بڑھتی رفتار، نو بڑے شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد میں ڈھائی گنا اضافہ

    الیکٹرک گاڑیوں کی بڑھتی رفتار، نو بڑے شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد میں ڈھائی گنا اضافہ

    الیکٹرک گاڑیوں کی بڑھتی رفتار، نو بڑے شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد میں ڈھائی گنا اضافہ

    وزارت توانائی نے ہفتہ کو ایک بیان میں کہا کہ دہلی، ممبئی، چنئی اور کولکاتا سمیت نو اہم شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد گزشتہ چار مہینوں میں تیزی سے بڑھی ہے۔ الیکٹرک گاڑیوں کو بڑھاوا دینے کی سرکاری پالیسی کے تحت بڑے شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد بڑھانے کی کوشش جاری ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ملک میں الیکٹرک گاڑیوں کی رفتار تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ سرکاری اعدادوشمار اس بات کی گواہی دے رہی ہیں۔ ملک کے نو بڑے شہروں میں الیکٹرک گاڑیوں (ای وی) کے چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد گزشتہ چار ماہ میں ہی ڈھائی گنا تک بڑھ چکی ہے۔ وزارت توانائی نے ہفتہ کو ایک بیان میں کہا کہ دہلی، ممبئی، چنئی اور کولکاتا سمیت نو اہم شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد گزشتہ چار مہینوں میں تیزی سے بڑھی ہے۔ الیکٹرک گاڑیوں کو بڑھاوا دینے کی سرکاری پالیسی کے تحت بڑے شہروں میں ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد بڑھانے کی کوشش جاری ہے۔

      اس بیان کے مطابق، اکتوبر 2021 سے لے کر جنوری 2022 کے درمیان ان نو شہروں میں 678 اضافی چارجنگ اسٹیشن قائم کئے گئے ہیں۔ اس طرح ان شہروں میں موجود عوامی ای وی اسٹیشنوں کی تعداد بڑھ کر 940 ہوگئی ہے۔ پورے ملک میں اب ان کی تعداد تقریباً 1,640 ہوچکی ہے۔

      چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد بڑھائی جا رہی ہے

      حکومت نے ابتدائی دور میں 40 لاکھ سے زیادہ آبادی والے بڑے شہروں میں الیکٹرک گاڑیوں پر حوصلہ افزائی کی حکمت عملی اپنائی ہوئی ہے۔ اسی ضمن میں بڑے شہروں میں الیکٹرک گاڑیوں کے لئے بنیاد ڈالنے کے لئے چارجنگ اسٹیشنوں کی تعداد بڑھائی جا رہی ہے۔

      وزارت توانائی نے گزشتہ 14 جنوری کو ای وی چارجنگ اسٹیشنوں کی تنصیب سے متعلق رہنما خطوط اور نظرثانی شدہ معیارات جاری کئے تھے۔ اس سے ای وی انفراسٹرکچر کے قیام سے متعلق صورتحال واضح ہونے کا امکان ہے۔ حکومت نے ای وی چارجنگ اسٹیشن قائم کرنے کی کوشش میں بی ای ای، ای ای ایس ایس، پی جی سی آئی ایل اور این ٹی پی سی جیسی عوامی اکائیوں کے علاوہ نجی کمپنیوں کو بھی اپنے ساتھ جوڑا ہے۔ اس سے بڑے علاقے میں ای وی انفراسٹرکچر کی بنیاد بنانے میں مدد ملے گی اور گاڑیوں کے صارفین کو الیکٹرک گاڑیوں کی طرف جانے کی ترغیب ملے گی۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: