உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گجرات میں انسانی اسمگلنگ کا پردہ فاش، 30 لڑکیوں کو کرایا گیا آزاد

    ساکچی تھانہ میں اس سلسلہ میں کیس درج کیا گیا ہے ۔ ساکچی تھانہ کے اے ایس آئی راجیش سنگھ نے بتایا کہ سٹی ایس پی کو سیکس ریکیٹ کے بار میں خفیہ اطلاع ملی تھی اور اس کی بنیاد پر کارروائی کی گئی ۔ (علامتی تصویر)

    ساکچی تھانہ میں اس سلسلہ میں کیس درج کیا گیا ہے ۔ ساکچی تھانہ کے اے ایس آئی راجیش سنگھ نے بتایا کہ سٹی ایس پی کو سیکس ریکیٹ کے بار میں خفیہ اطلاع ملی تھی اور اس کی بنیاد پر کارروائی کی گئی ۔ (علامتی تصویر)

    گجرات کے ضلع نوساری میں پولس نے مبینہ طور پر غیر قانونی طریقہ سے لائی گئیں 30 لڑکیوں کو آج آزاد کرایا۔پولس نے بتایا کہ خفیہ اطلاع کی بنیاد پر کی گئی کارروائی میں مکھنگا گاوں کی جھینگا مچھلی کا کاروبار کرنے والی ایک فیکٹری سے ان لڑکیوں کو آزاد کرایا گیا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      نوساری: گجرات کے ضلع نوساری میں پولس نے مبینہ طور پر غیر قانونی طریقہ سے لائی گئیں 30 لڑکیوں کو آج آزاد کرایا۔پولس نے بتایا کہ خفیہ اطلاع کی بنیاد پر کی گئی کارروائی میں مکھنگا گاوں کی جھینگا مچھلی کا کاروبار کرنے والی ایک فیکٹری سے ان لڑکیوں کو آزاد کرایا گیا۔

       

      انہیں سلائی -کڑھائی اور دوسرے کا م سکھانے کے نام پرجھارکھنڈ سے لانے والی خاتون منجو بین کو انسانی اسمگلنگ اور دیگر جرائم کے الزام میں گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ان لڑکیوں کو ایک ماہ سے اس فیکٹری میں رکھا گیا تھا۔ اب انہیں سورت کے ویمن کنزرویشن ہوم بھیجا گیا ہے۔ اس سلسلے میں جھارکھنڈ کے دارالحکومت رانچی میں بھی ایک معاملہ درج کیا گیا ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: