உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Varanasi Gyanvapi Mosque Case : گیان واپی مسجد کو لے کر بڑھا تنازعہ، عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد سروے کا وقت ہوگا طئے

    Youtube Video

    Varanasi Gyanvapi Mosque Case: انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کے وکیل ابھے ناتھ یادو، ممتاز احمد، رئیس احمد انصاری نے کمیشن کی کارروائی کرنے والے ایڈوکیٹ کمشنر اجے کمار مشرا کو تبدیل کرنے کی اپیل کی۔

    • Share this:
      Varanasi Gyanvapi Mosque Case:انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کی جانب سے سول جج (سینئر ڈویژن) روی کمار دیواکر کی عدالت میں ہفتہ کو ایک درخواست داخل کی گئی تاکہ گیانواپی کیمپس میں کمیشن کی کارروائی چلانے والے ایڈوکیٹ کمشنر کو تبدیل کیا جائے۔ اس درخواست پر ظہرانے کے بعد عدالت میں سماعت کے دوران انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کے وکلاء نے ایڈوکیٹ کمشنر کے کام کاج پر سوال اٹھایا اور انہیں تبدیل کرنے کی اپیل کی۔

      اسی دوران انتظامیہ کی جانب سے موجود ضلعی حکومت کے وکیل نے انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کے وکلاء کے الزامات پر اعتراض کیا اور ایڈوکیٹ کمشنر کی کارروائی کو تسلی بخش قرار دیا۔ عدالت نے انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کے وکلاء اور ضلعی حکومت کے وکیل کے دلائل سننے کے بعد مدعیان اور ایڈووکیٹ کمشنر سے اس پر اعتراضات طلب کر لیے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      'دھرم سنسد' میں نفرت آمیز تقریر پر دہلی پولیس نے درج کیا کیس، SC نے لگائی تھی پھٹکار

      عدالت کا کہنا ہے کہ اس معاملے میں مدعا علیہ انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کی جانب سے ایڈووکیٹ کمشنر پر سوالیہ نشان لگایا گیا ہے، جب کہ مدعا علیہ حکومت، انتظامیہ اور پولیس کمشنر کی جانب سے ایڈووکیٹ کمشنر کو حکومت کی جانب سے غیر جانبدار قرار دیا گیا ہے۔ درخواست کی کاپی ابھی تک مدعیوں کے وکلاء کو نہیں ملی اور نہ ہی ایڈووکیٹ کمشنر اپنا موقف پیش کرنے کے لیے پیش ہوئے۔ ایسی صورت حال میں یہ جواز ہوگا کہ درخواست کی کاپی مدعی کو دی جائے۔ عدالت نے انجمن انصافیہ مسجد کی درخواست پر اگلی سماعت کے لیے 9 مئی 2022 کی تاریخ مقرر کی ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Gyan Vapi مسجد پر ہورہی سیاست پر علما کا ردعمل، ہندو۔مسلم چھیڑ کر سیاسی مفاد حاصل نہ کریں

      سماعت کے دوران، انجمن انصافیہ مسجد کمیٹی کے وکیل ابھے ناتھ یادو، ممتاز احمد، رئیس احمد انصاری نے کمیشن کی کارروائی کرنے والے ایڈوکیٹ کمشنر اجے کمار مشرا کو تبدیل کرنے کی اپیل کی۔ دلیل دی گئی کہ ایڈوکیٹ کمشنر کے ذریعہ سروے کے دوران ان کے اعتراضات پر توجہ نہیں دی گئی۔ ان کی جانب سے مجاز نمائندے کو موقع پر موجود رہنے سے منع کر دیا گیا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: