ایئر کرافٹ کی خفیہ اطلاع پاکستان کو دینے کے معاملے میں HAL ملازم گرفتار

انڈین آرمڈ فورسیز سویلین آفس میں تعینات ڈرائیور کو راجستھان انٹلی جنس کی ٹیم نے گرفتار کیا ہے ۔ ڈرائیور کا نام رام نیواس گورا بتایا جارہا ہے ۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس ( انٹلی جنس ) امیش مشرا نے اس معاملہ پر پوری جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ رام نیواس گورا جو پربت سر ناگور کا رہنے والا ہے ، جے پور کے نیوارو میں واقع فوج کے دفتر میں ڈرائیور کا کام کرتا ہے ۔ علامتی تصویر ۔

انڈین آرمڈ فورسیز سویلین آفس میں تعینات ڈرائیور کو راجستھان انٹلی جنس کی ٹیم نے گرفتار کیا ہے ۔ ڈرائیور کا نام رام نیواس گورا بتایا جارہا ہے ۔ ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس ( انٹلی جنس ) امیش مشرا نے اس معاملہ پر پوری جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ رام نیواس گورا جو پربت سر ناگور کا رہنے والا ہے ، جے پور کے نیوارو میں واقع فوج کے دفتر میں ڈرائیور کا کام کرتا ہے ۔ علامتی تصویر ۔

مہاراشٹر اے ٹی ایس نے ہندوستان ایئرو ناٹکس لمیٹیڈ کے ایک ملازم کوخفیہ اطلاع لیک کرنے کے معاملے میں گرفتار کیا ہے۔

  • Share this:
    ممبئی: مہاراشٹر اے ٹی ایس (Mharashtra ATS) نے ہندوستان ایئرو ناٹکس لمیٹیڈ کے ایک ملازم کوخفیہ اطلاع لیک کرنے کے معاملے میں گرفتار کیا ہے۔ 41 سالہ دیپک شریستھ (Deepak Shirsath) پر الزام ہے کہ وہ HAL کے ایئرکرافٹ (Confidential Aircraft Info) سے متعلق خفیہ اطلاع پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کو دے رہے تھے۔انہیں HAL کے ناسک یونٹ سے گرفتار کیا گیا۔

    ڈی سی پی، اے ٹی ایس ونے راٹھور کے مطابق، ہمارے پاس ایک بالکل ٹھیک جانکاری آئی تھی کہ HAL میں کام کرنے والے دیپک شریستھ جو وہاں پر اسسٹنٹ سپروائزر کے طور پر کام کرتے تھے، وہ سوشل میڈیا کی مدد سے HAL کے ایئر کرافٹ اور فائٹر جیٹ کی جانکاری پاکستان کو دیتے تھے۔ ہم نے انہیں سیکریٹ ایکٹ کے تحت گرفتار کیا ہے۔ آگے کی جانچ چل رہی ہے۔

    اے ٹی ایس کے ذرائع کے مطابق دیپک شریستھ  کے ذریعہ معلومات لیک کرنے کی اطلاع ملی تھی۔ وہ ہندوستانی جنگی طیاروں سے متعلق جانکاری ایک غیرملکی شخص کو دے رہا تھا۔
    اے ٹی ایس کے ذرائع کے مطابق دیپک شریستھ کے ذریعہ معلومات لیک کرنے کی اطلاع ملی تھی۔ وہ ہندوستانی جنگی طیاروں سے متعلق جانکاری ایک غیرملکی شخص کو دے رہا تھا۔


    ہندوستانی جنگی طیاروں سے متعلق معلومات لیک ہوگئیں

    اے ٹی ایس کے ذرائع کے مطابق دیپک شریستھ  کے ذریعہ معلومات لیک کرنے کی اطلاع ملی تھی۔ وہ ہندوستانی جنگی طیاروں سے متعلق جانکاری ایک غیرملکی شخص کو دے رہا تھا۔ گرفتاری کے بعد لمبی پوچھ گچھ کے دوران دیپک نے انکشاف کیا کہ وہ مسلسل پاکستانی خفیہ ایجنسی کے رابطہ میں تھا اور اسے حساس معلومات دے رہا تھا۔ اس کے علاوہ HAL سے متعلق دیگر اطلاعات بھی وہ آئی ایس آئی کو دے رہا تھا۔ دیپک ناسک کے اوزار واقع HAL کی مینوفیکچرنگ یونٹ اور اس کے ممنوعہ علاقوں کی جانکاری بھی لیک کر رہا تھا۔

    10 دنوں کی اے ٹی ایس حراست

    دیپک کے خلاف آفیشیل سیکریٹ ایکٹ 1923 کے سیکشن 3،4 اور 5 کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ پانچ سم، تین موبائل اور دو میموری کارڈ بھی اس سے برآمد کئے گئے ہیں۔ انہیں فورنسک لیب بھیجا دیا گیا ہے۔ مانا جارہا ہے کہ ان کے ذریعہ معلومات مستقبل میں سامنے آسکتی ہیں۔ مہاراشٹر اے ٹی ایس نے دیپک شریستھ کو جمعہ کو عدالت کے سامنے پیش کردیا، جہاں سے اسے 10 دن کی اے ٹی ایس کی حراست میں بھیج دیا گیا۔
    Published by:Nisar Ahmad
    First published: