உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Delhi News: ہنومان جینتی جلوس کےدوران دہلی میں حالات کشیدہ،جہانگیر پوری میں مبینہ طورپر پتھراؤ میں متعدد زخمی

    Youtube Video

    ہنومان جینتی (Hanuman Jayanti)کے دوران شوبھا یاترا (Shobha Yatra)کے دوران مبینہ طورپر پتھراؤ میں ایک پولس اہلکار سمیت کئی لوگ زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو علاج کے لیے جہانگیر پوری کے بابو جگجیون رام اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ساتھ ہی پولیس کا کہنا ہے کہ علاقے میں حالات فی الحال قابو میں ہیں۔

    • Share this:
      دارالحکومت دہلی(National Capital Delhi) کے جہانگیر پوری (Jahangiri Puri)علاقے میں سنیچر کی شام دو گروپوں(Communal Tension) کے درمیان زبردست ہنگامہ آرائی ہوئی۔ ہنومان جینتی (Hanuman Jayanti)کے موقع پر شوبھا یاترا (Shobha Yatra)کے دوران مبینہ طورپر  پتھراؤ  میں ایک پولس اہلکار سمیت کئی لوگ زخمی ہو گئے۔ زخمیوں کو علاج کے لیے جہانگیر پوری کے بابو جگجیون رام اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ساتھ ہی پولیس کا کہنا ہے کہ علاقے میں حالات فی الحال قابو میں ہیں۔

      ڈی سی پی انویس رائے، جو دہلی پولس میں پبلک ریلیشن آفیسر کا کام دیکھ رہے ہیں، کہتے ہیں کہ جہانگیر پوری میں ہنومان جینتی کے جلوس کے دوران حالات کشیدہ ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہنومان جینتی کے جلوس پرمبینہ طورپر  پتھراؤ  کے بعد آتش زنی کے واقعات رونما ہوئے ہیں۔محکمہ پولیس کے اعلیٰ حکام موقع پر موجود ہیں۔ صورتحال قابو میں ہے اور معاملے کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے علاقے میں اضافی نفری تعینات کر دی گئی ہے۔


      انہوں نے کہا کہ مبینہ طورپر  پتھراؤ  کے دوران زخمی ہونے والے پولیس اہلکاروں کی شناخت کی جا رہی ہے۔ آتشزدگی کے واقعات کو دیکھتے ہوئے دہلی فائر سروس کی 2 گاڑیاں بھی موقع پر پہنچ گئیں۔ تاہم، دہلی فائر سروس کے ڈائریکٹر اتل گرگ کا کہنا ہے کہ یہ واقعات کافی چھوٹے تھے۔اس لیے وہاں آپریشن روک دیا گیا ہے اور گاڑیوں کو واپس بلالیا گیا ہے۔

      دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے جہانگیر پوری میں ہنگامہ آرائی پر لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ہے۔ مرکز پر الزام لگاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دہلی کی حفاظت مرکز کی ذمہ داری ہے۔

      وزیر داخلہ امت شاہ نے پولیس کمشنر سے کی بات


      جہانگیر پوری میں فرقہ وارانہ کشیدگی پر مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے دہلی پولیس کے سینئر افسران سے بات کی ہے اور انہیں ملزمین کے خلاف فوری کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہے۔ وزارت داخلہ نے دہلی پولیس کو ضروری فورس بھیجنے کے احکامات بھی جاری کیے ہیں۔ وزارت داخلہ صورتحال پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہے۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے اس واقعہ کے بارے میں دہلی پولیس کمشنر سے فون پر بات کی۔ اس کے علاوہ انہوں نے اسپیشل سی پی لاء اینڈ آرڈر دیپیندر پاٹھک سے بھی بات کی جو موقع پر موجود تھے فون پر۔ مرکزی وزیر نے امن و امان اور ماحول کو پرامن رکھنے کی ہدایات بھی دی ہیں۔

      دوسری جانب بی جے پی لیڈر کپل مشرا نے کہا ہے کہ دہلی کے جہانگیر پوری میں ہنومان جیتنی کے جلوس پر مبینہ طورپر  پتھراؤ دہشت گردانہ کارروائی ہے۔ بنگلہ دیشی دراندازوں کی بستی نے اب ہندوستان کے شہریوں پر حملہ کرنے کی جسارت کردی ہے، غیر قانونی دراندازوں کو ان کے ہر کاغذات کی جانچ پڑتال کرکے ملک سے نکالنا ضروری ہو گیا ہے۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: