உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہاردک پٹیل کو گجرات ہائی کورٹ سے لگا بڑا جھٹکا ، سزاپر روک لگانے سے متعلق عرضی خارج

    پاٹیدار لیڈر ہاردک پٹیل ۔ فائل فوٹو

    پاٹیدار لیڈر ہاردک پٹیل ۔ فائل فوٹو

    ہاردک نے گزشتہ 8مارچ کو یہ عرضی عدالت میں اس لیے دی تھی تاکہ انکے لوک سبھا انتخاب لڑنے میں کوئی دقت نہ آئے ۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      گجرات ہائی کورٹ نے کانگریس میں حال ہی میں شامل ہوئے پاٹیدار آرکشن آندولن سمیتی کے سابق لیڈر ہاردک پٹیل کو آج سخت دھچکا دیتے ہوئے ایک نچلی عدالت سے ملی انکی سزاپر روک لگانے سے متعلق عرضی آج خارج کردی ۔ ہاردک نے گزشتہ 8مارچ کو یہ عرضی عدالت میں اس لیے دی تھی تاکہ انکے لوک سبھا انتخاب لڑنے میں کوئی دقت نہ آئے ۔
      جسٹس اے جی اوریزی کی عدالت نے اس معاملہ میں سماعت کل مکمل کرلی تھی اور آج اپنا فیصلہ سنایا۔ان کے وکیل آئی ایچ سید اور رفیق لوکھنڈ والا اور سلیم سید کی دلیل تھی کہ ان کے موکل کے خلاف نچلی عدالت نے بغیر ثبوت کےہی سزا دیدی ہے ۔انھوں نے یہ بھی دلیل دی تھی کہ قتل غیر امد کے ایک معاملہ میں سزاکے بعد رکن پارلیمان کا عہدہ گنوانے والے پنجاب کے وزیر اور سابق کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو کو سپریم کورٹ سے ملی راحت کے طرز پر ہاردک کوراحت ملے ۔حالانکہ سرکاری وکیل نے اس کی مخالفت کرتے ہوئے کہاکہ ہاردک کے معاملہ کا موازنہ سدھو کے معاملہ سے نہیں ہوسکتا۔فی الحال یہ واضح نہیں ہے کہ ہاردک اب کیاقدم اٹھائیں گے ، لیکن اب لگتاہے کہ وہ سپریم کورٹ سے رجوع کریں گے ۔
      انکےایک وکیل سلیم ایم سید نے یواین آئی کو بتایاکہ عدالت کے فیصلہ کا تفصیلی مطالعہ کیاجائیگا ، لیکن وہ ہاردک کو سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کی صلاح دیں گے ۔کل سماعت کے دوران سرکاری وکیل نے کہاتھا کہ ہاردک کے خلاف تقریبا ڈیڑھ درجن معاملات ہیں ۔قانون توڑنے والے کو قانون بنانے والا نہیں بناناچاہئے ۔سماجی خدمت کے لیے ایم ایل اے یاایم پی بننا ضروری نہیں ہے ۔ہاردک کے برتاؤسے واضح ہے کہ وہ قانون کا احترام نہیں کرتے اور انھیں ملی ضمانت کی شرائط کی بھی وہ خلاف ورزی کرتے رہے ہیں ۔
      یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ کانگریس پارٹی کب تک جام نگر سیٹ ،جہاں سے انتخاب لڑنے کی خواہش ہاردک نے ظاہر کی تھی ، کے لیے کسی امیدوار کے نام کا اعلان نہیں کرتی ہے ۔ریاست کی سبھی 26سیٹوں پر ایک ساتھ 23اپریل کو تیسرے مرحلہ میں پولنگ ہوگی ۔اس کے لیے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کاعمل کل ہی شروع ہوگیاہے اور چاراپریل تک جاری رہے گا۔ہاردک گزشتہ 12مارچ کو کانگریس میں شامل ہوئے تھے ۔
      First published: