ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رشی کیش: لکشمن جھولا پر غیر ملکی خاتون نے شوٹ کیا برہنہ ویڈیو، بتائی یہ وجہ

27 سالہ فرانسیسی لڑکی (French Girl) رشی کیش (Rishikesh) کے لکشمن جھولا (Laxman Jhula) پر برہنہ ویڈیو شوٹ کر رہی تھی۔ اس کے بعد مقامی وارڈ کونسلر گجیندر سجوان نے 25 اگست کو خاتون کے خلاف تھانے میں شکایت کی۔

  • Share this:
رشی کیش: لکشمن جھولا پر غیر ملکی خاتون نے شوٹ کیا برہنہ ویڈیو، بتائی یہ وجہ
رشی کیش: لکشمن جھولا پر غیر ملکی خاتون نے شوٹ کیا برہنہ ویڈیو، بتائی یہ وجہ

رشی کیش: اتراکھنڈ کے رشی کیش (Rishikesh) میں ایک حیران کرنے والا معاملہ سامنے آیا ہے۔ یہاں پر فرانس کی ایک لڑکی (French Girl) کو پولیس نے گرفتار کیا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ پولیس نے گنگا ندی کے اوپر بنے لکشمن جھولے (Laxman Jhula) پر برہینہ ویڈیو (Video) بنانے کے الزام میں اسے گرفتار کیا ہے۔ اس حادثہ سے آس پاس کے علاقے میں سنسنی پھیل گئی ہے۔ جس نے بھی لڑکی کے بارے میں سنا، اس نے دانتوں تلے انگلی دبالی۔ حالانکہ، بعد میں اس لڑکی کو کچھ شرطوں کے ساتھ ضمانت بھی مل گئی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق، 27 سالہ فرانسیسی لڑکی رشی کیش واقع لکشمن جھولا پر برہنہ ویڈیو شوٹ کر رہی تھی۔ اس کے بعد مقامی وارڈ کونسلر گجیندر سجوان نے 25 اگست کو خاتون کے خلاف تھانے میں شکایت کی۔ شکایت کے بعد پولیس حرکت میں آئی اور فرانسیسی لڑکی کو گرفتار کرلیا۔


رشی کیش کے منی کی ریتی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج


اطلاعات کے مطابق، رشی کیش کے منی کی ریتی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی گئی تھی۔ وارڈ کونسلر گجیندر سجوان کی شکایت کی بنیادپر پولیس نے انفارمیشن ٹیکنالوجی ایکٹ کے تحت غیر ملکی لڑکی کے خلاف معاملہ درج کیا۔ سینئر سب انسپکٹر آرکے سینی نے بتایا کہ وارڈ کونسلر گجیندر سجوان نے شکایت درج کرائی تھی کہ ایک خاتون لکشمن جھولا پر برہنہ ویڈیو اور فوٹو شوٹ کر رہی تھی۔ حالانکہ کونسلر کو یہ اطلاع سوشل میڈیا کے ذریعہ ملی تھی۔


جانچ شروع کی تو ملزم صحیح پایا گیا

جب پولیس نے جانچ شروع کی تو الزام صحیح پایا گیا اور اس کی تصدیق بھی ہوئی کہ لکشمن جھولا پر برہنہ ویڈیو شوٹ کیا گیا تھا۔ وہیں جانکاری لینے پر مقامی لوگوں نے بتایا کہ خاتون رشی کیش کے ایک ہوٹل میں ٹھہری ہوئی ہے۔ اس کے بعد پولیس نے اس ہوٹل میں گئی اور اس سے حادثہ کے بارے میں پوچھ گچھ کی۔ پوچھ گچھ کے دوران، ملزم لڑکی نے برہنہ ویڈیو شوٹ کرنے کی بات کا اعتراف کرلیا۔ پھر پولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔

پولیس کو اس بات کی اطلاع نہیں تھی

خاص بات یہ ہے کہ لڑکی نے کہا کہ اسے اس بات کی اطلاع نہیں تھی کہ ہندوستان میں عوامی مقامات پر برہنہ ویڈیو یا فوٹو شوٹ کرنا منع ہے۔ اس نے کہا کہ اس نے یہ ویڈیو اور فوٹو شوٹ من کے اور ہار کی تجارت کو فروغ دینے کے مقصد سے کیا تھا۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 30, 2020 01:41 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading