உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کلبھوشن جادھو کو چھڑانے کیلئے پاکستان سے ہوئی تھی بیک۔چینل بات چیت: ہریش سالوے

    قابل ذکر ہے کہ پاکستان نے جادھو کو مارچ 2016 میں گرفتار کیا تھا اور اپریل 2017 میں پاکستان کی فوجی عدالت نے انہیں ہندوستانی جاسوس اور دہشت گرد بتاکر موت کی سزا سنائی تھی ۔

    قابل ذکر ہے کہ پاکستان نے جادھو کو مارچ 2016 میں گرفتار کیا تھا اور اپریل 2017 میں پاکستان کی فوجی عدالت نے انہیں ہندوستانی جاسوس اور دہشت گرد بتاکر موت کی سزا سنائی تھی ۔

    قابل ذکر ہے کہ پاکستان نے جادھو کو مارچ 2016 میں گرفتار کیا تھا اور اپریل 2017 میں پاکستان کی فوجی عدالت نے انہیں ہندوستانی جاسوس اور دہشت گرد بتاکر موت کی سزا سنائی تھی ۔

    • Share this:
      پاکستان کی جل میں قید ہندستانی شہری اور سابق بحریہ آفیسر کلبھوشن جادھو (Kulbhushan Jadhav) کو واپس لانے کیلئے کئی بار چیک۔چینل سے وہاں کی حکومت کو منانے کی کوششیں کی گئیں۔ اس بات کا انکشاف ہریش سالوے نے کیا۔ سالوے اس کیس میں انٹرنیشنل کورٹ آف جسٹس (ICJ) میں ہندستان کے کاؤنسلر تھے۔ ساتھ ہی وہ ہندستان کے سابق سالیسٹر جنرل بھی ہیں۔
      بتادیں کہ جادھو کو پاکستان کی عدالت نے اپریل 2017 میں پھانسی کی سزا سنائی تھی۔ پاکستان نے ان پر ہندستان کا جاسوس ہونے کے الزام لگائے ہیں۔
      اس بنیاد پر چھوڑنے کی ہوئی بات۔۔
      انگریزی اخبار انڈین ایکسپریس کے مطابق ایک سوال کے جواب میں ہریش سالوے نے لندن سے کہا، 'ہمیں امید تھی کہ پاکستان سے گزشتہ دروازے سے بات چیت کررنے پر ہم ا نہیں منا لیں گے۔ ہم انہیں انسانی بنیاد پر چھوڑنے کی بات کررہے تھے لیکن ایسا ہوا نہیں۔ دراصل کلبھوشن جادھو کا معاملہ پاکستان کیلئے شہرت کا مسئلہ بن گیا تھا۔

      کلبھوشن جادھو 2016 سے پاکستان میں جیل میں ہیں۔ پاکستان کا الزام ہے کہ کلبھوشن جادھو جاسوس ہے۔ تاہم ، ہندوستان کے ذریعہ اس دعوے کی کئی بار تردید کی جاچکی ہے۔ پاکستانی سکیورٹی فورسز نے جاسوسی اور دہشت گردی کے الزام میں 3 مارچ 2016 کو بلوچستانسے گرفتار کیا تھا۔ سال 2017 میں ہندوستان نے یہ معاملہ آئی سی جے (ICJ) میں اٹھایا۔ گذشتہ سال جولائی میں عدالت نے پاکستان سے کلبھوشن جادھو کو قونصلر رسائی(Consular Access) دینے اور سزائے موت پر نظر ثانی کرے۔
      قابل ذکر ہے کہ پاکستان نے جادھو کو مارچ 2016 میں گرفتار کیا تھا اور اپریل 2017 میں پاکستان کی فوجی عدالت نے انہیں ہندوستانی جاسوس اور دہشت گرد بتاکر موت کی سزا سنائی تھی ۔
      Published by:sana Naeem
      First published: