உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Ajay Chautala کی 10 سال کی سزا پوری ، تہاڑ جیل سے ہوئے رہا ، دشینت نے کہا : برے خواب کا ہوا خاتمہ

    Ajay Chautala کی 10 سال کی سزا پوری ، تہاڑ جیل سے ہوئے رہا ، دشینت نے کہا : برے خواب کا ہوا خاتمہ

    Ajay Chautala کی 10 سال کی سزا پوری ، تہاڑ جیل سے ہوئے رہا ، دشینت نے کہا : برے خواب کا ہوا خاتمہ

    Ajay Chautala Released from Tihar Jail Today: سابق ممبر پارلیمنٹ اور ہریانہ کے نائب وزیر اعلی دشینت چوٹالہ کے والد اجے چوٹالہ کو ہریانہ میں ٹیچر بھرتی گھوٹالہ کے سلسلے میں دس سال کی قید کی سزا پوری کرنے کے بعد جمعرات کو تہاڑ جیل سے رہا کردیا گیا ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : سابق ممبر پارلیمنٹ اور ہریانہ کے نائب وزیر اعلی دشینت چوٹالہ کے والد اجے چوٹالہ کو ہریانہ میں ٹیچر بھرتی گھوٹالہ کے سلسلے میں دس سال کی قید کی سزا پوری کرنے کے بعد جمعرات کو تہاڑ جیل سے رہا کردیا گیا ۔ جیل افسران نے بتایا کہ چوٹالہ کی سزا پوری ہوگئی تھی اور انہیں جمعرات کو باضابطہ طور پر رہا کردیا گیا ۔

      جیل کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ چوٹالہ کو سی بی آئی کے ایک معاملہ میں ( کورٹ کے ذریعہ) قصوروار قرار دئے جانے کے بعد دس سال کی قید کی سزا کیلئے 16 جنوری 2013 کو جیل میں ڈالا تھا تھا ۔ سزا کی مدت کے دوران انہوں نے کل دو سال سات مہینے اور 24 دنوں کی چھٹی حاصل کی ۔

      انہوں نے بتایا کہ چودہ مئی 2021 سے ایمرجنسی پیرول پر تھے ۔ وہ جمعرات کو تہاڑ جیل پہنچے اور اپنے جرمانہ کی رقم جمع کی ، جس کے بعد انہیں رہا کردیا گیا ۔

      غور طلب ہے کہ ہریانہ کے سابق وزیر اعلی اوم پرکاش چوٹالہ کے بڑے بیٹے اجے چوٹالہ اور 53 دیگر افراد کو 3206 جونیئر پرائمری ٹیچروں کی سال 2000 میں غیرقانونی بھرتی کے معاملہ میں قصوروار قراردیا گیا تھا ۔ ایک خصوصی سی بی آئی عدالت نے جنوری 2013 میں اس معاملہ میں سزا سنائی تھی ۔ اوم پرکاش چوٹالہ کو پچھلے سال تہاڑ جیل سے رہا کیا گیا تھا ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: