ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

نابالغ بیٹی کی وحشی باپ نے کی بار بار آبروریزی ، حاملہ ہوئی تو اٹھایا یہ شرمناک قدم

نابالغ نے پولیس کو بتایا کہ 11 جون 2018 کو اس کی ماں گھر پر نہیں تھی ۔ شراب پی کر اس کا باپ آیا اور اس کی آبروریزی کی ۔

  • Share this:
نابالغ بیٹی کی وحشی باپ نے کی بار بار آبروریزی ، حاملہ ہوئی تو اٹھایا یہ شرمناک قدم
علامتی تصویر

ہریانہ میں حصار ضلع کے ایک گاوں میں 11 ویں درجہ میں پڑھنے والی نابالغ طالبہ کی اس کے باپ نے نشے کی حالت میں آبروریزی کی ۔ جب نابالغ لڑکی حاملہ ہوئی تو دوا کے ذریعہ اس کا اسقاط حمل کروا دیا گیا ۔ ملزم اپنی بیوی کے ساتھ بھی مار پیٹ کرتا تھا اور کئی مرتبہ اس کو گھر سے نکال بھی چکا ہے ۔ پولیس کے مطابق نابالغ طالبہ کا باپ شراب پینے کا عادی ہے اور وہ روز شراب پی کر آتا ہے اور بیوی سے جھگڑا کرتا ہے ۔


سال 2018 میں باپ سے تنازع کے بعد نابالغ لڑکی کی ماں راجستھان چلی گئی تھی ۔ نابالغ نے پولیس کو بتایا کہ 11 جون 2018 کو اس کی ماں کے گھر پر نہیں تھی اور شراب پی کر اس کا باپ آیا اور اس کی آبروریزی کی ۔ اگلے دن نشہ اترنے پر اس نے اس سے معافی مانگی ، لیکن وہ بعد میں شراب پی کر بار بار اس کی آبروریزی کرنے لگا ۔


علامتی تصویر


جب اس کے پیٹ میں پریشانی ہوئی تو اس کا الٹرا ساونڈ کروایا گیا ، جس میں اس کے حاملہ ہونے کا انکشاف ہوا ۔ ملزم باپ نے نابالغ بیٹی کو دوا دی اور پیٹ درد ٹھیک ہونے کی بات کہی ۔ مگر دوا کھانے کے بعد متاثرہ کی طبیعت مزید بگڑ گئی ۔

متاثرہ لڑکی نے الزام لگایا کہ نومبر 2019 میں بھی اس کے باپ نے اس کی ماں کے ساتھ مار پیٹ کی اور اس کو گھر سے نکال دیا ۔ اس کے بعد اس کی ماں دو دن پہلے ہی اس کو لینے کیلئے آئی تھی ۔ متاثرہ نے اس دوران اپنی ماں کو پوری آپ بیتی سنائی  ۔

یہ بھی پڑھیں : سیکس ریکیٹ کی شکایت پر پہنچی پولیس ، صرف خواتین ملیں تو اس جرم میں بھیج دیا جیل
First published: Jan 13, 2020 04:20 PM IST