உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hijab Controversy:ہریانہ کے وزیرداخلہ انیل وِج نے کہا- حجاب کی کوئی مخالفت نہیں، اسکول اور کالج میں رولس پر عمل کرنا ضروری

    ہریانہ کے وزیر داخلہ انیل وج۔ (فائل فوٹو)

    ہریانہ کے وزیر داخلہ انیل وج۔ (فائل فوٹو)

    سینئر بی جے پی لیڈر وج نے کہا، ’اگر کوئی طالبہ حجاب پہننا چاہتی ہے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے، لیکن اگر وہ اسکول اور کالج جانا چاہتی ہے تو اسے ان اداروں کے لباس کے اصولوں پر عمل کرنا ہوگا‘۔

    • Share this:
      چنڈی گڑھ: کرناٹک(Karnataka)میں کچھ طالبات کے حجاب پہننے کے تنازعہ کے درمیان ہریانہ کے وزیر داخلہ انل وج نے بدھ کو کہا کہ اس ہیڈ اسکارف کی کوئی مخالفت نہیں ہے۔ لیکن اسکولوں اور کالجوں میں لباس سے متعلق اصولوں پر عمل کرنا ضروری ہے۔ سینئر بی جے پی لیڈر وج نے کہا، ’اگر کوئی طالبہ حجاب پہننا چاہتی ہے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے، لیکن اگر وہ اسکول اور کالج جانا چاہتی ہے تو اسے ان اداروں کے لباس کے اصولوں پر عمل کرنا ہوگا‘۔ انہوں نے کہا، ’اگر کوئی اس (لباس کے اصول) پر عمل نہیں کرتا ہے تو وہ گھر میں ہی رہے، کوئی حرج نہیں ہے‘۔ کرناٹک میں حجاب کے حق میں اور خلاف مظاہرے پرتشدد ہو گئے ہیں۔

      کرناٹک میں مسلم لڑکیوں کے حجاب پہننے کے حق کو لے کر تنازعہ کھڑا ہو گیا ہے۔ اب معاملہ عدالت میں ہے اور تنازع اتنا بڑھ گیا ہے کہ اس پر سیاست بھی جاری ہے۔ حال ہی میں پوری دنیا میں بیداری پیدا کرنے، مذہبی رواداری کو فروغ دینے اور حجاب کی اہمیت کو بتانے کے لیے مسلم خواتین نے یکم فروری کو عالمی یوم حجاب منایا تھا۔ اب اس کے بعد تنازعہ بڑھ گیا ہے۔ مسلم خواتین حجاب کے حق میں مظاہرہ کر رہی ہیں اور جس کالج میں خواتین کو داخلہ نہیں دیا جا رہا تھا وہاں ایک کالج نے حجاب پہننے والی لڑکیوں کو الگ سے بٹھا دیا ہے۔

      کیا ہوتا ہے حجاب؟
      حجاب نقاب سے کافی الگ ہوتا ہے۔ حجاب کا مطلب پردے سے ہے۔ قرآن میں پردے کا مطلب کسی کپڑے کے پردے سے نہیں بلکہ مردوں اور خواتین کے درمیان پردے سے ہے۔ وہیں، حجاب میں بالوں کو پوری طرح سے ڈھانکنا ہوتا ہے یعنی حجاب کا مطلب سر ڈھانکنے سے ہے۔ حجاب میں خواتین صرف بالوں کو ہی ڈھانکتی ہیں۔ کسی بھی کپڑے سے خواتین کا سر اور گردن ڈھکے ہونا ہی اصل میں حجاب کہا جاتا ہے، لیکن خواتین کا چہرہ نظر آتا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: