உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہریانہ : جیند میں سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، چار لڑکیوں سمیت سات افراد گرفتار

    ہریانہ : جیند میں سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، چار لڑکیوں سمیت سات افراد گرفتار

    ہریانہ : جیند میں سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، چار لڑکیوں سمیت سات افراد گرفتار

    Sex Racket Exposed in Jind : خاتون تھانہ پولیس نے گوہانا روڈ پر واقع ایک ہوٹل میں چھاپہ ماری کرکے مبینہ سیکس ریکیٹ کا انکشاف کیا ۔ اس معاملہ میں چار لڑکیوں سمیت سات افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      جیند : ہریانہ کے جیند ضلع میں پولیس نے جسم فروشی کے ایک ریکیٹ کا پردہ فاش کیا ہے ۔ خاتون تھانہ پولیس نے گوہانا روڈ پر واقع ایک ہوٹل میں چھاپہ ماری کرکے مبینہ سیکس ریکیٹ کا انکشاف کیا ۔ اس معاملہ میں چار لڑکیوں سمیت سات افراد کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ معاملہ میں گرفتار لڑکے اور لڑکیوں سمیت تقریبا 12 لوگوں کے خلاف انسداد جسم فروشی ایکٹ کے تحت معاملہ درج کیا گیا ہے ۔

      پولیس کے مطابق خفیہ اطلاع ملنے پر خاتون تھانہ کی انچارج گیتا دیوی کی قیادت میں ٹیم تشکیل دی گئی ۔ ملی جانکاری کی تصدیق کیلئے جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب ہوٹل میں پہلے فرضی گراہک کو بھیجا گیا اور سیکس ریکیٹ چلنے کی تصدیق ہونے پر چھاپہ ماری کی کارروائی انجام دی گئی ۔ انہوں نے بتایا کہ معاملہ میں ہوٹل کے منیجر اجے کو بھی گرفتار کیا گیا ہے ۔

      پولیس کے مطابق مبینہ جسم فروشی کے الزام میں گرفتار چار لڑکیوں میں دو مغربی بنگال کی جبکہ ایک لڑکی بہار اور ایک اترپردیش کی رہنے والی ہے ۔ پولیس نے بتایا کہ پوچھ گچھ کے دوران پتہ چلا کہ راجو نام کا شخص ریکیٹ میں دلال کا کام کرتا تھا جو اندھیرے کا فائدہ اٹھاکر فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ۔

      وہیں ریکیٹ کا سرغنہ بھارتی اور بھاسکر کو بتایا جارہا ہے ۔ گیتا دیوی نے بتایا کہ گرفتار سات لوگوں کو جمعہ کو عدالت میں پیش کیا گیا ، جہاں سے انہیں عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ دیگر ملزمین کو پکڑنے کیلئے پولیس چھاپہ ماری کی کارروائی انجام دے رہی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: