ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، قابل اعتراض حالت میں ملے تین لڑکے اور چار لڑکیاں ، گرفتار

پولیس افسر کے مطابق لڑکیاں چنڈی گڑھ ، دہلی اور پنجاب سے لائی جاتی تھیں اور یہاں پر ناجائز طور پر سیکس ریکیٹ چلایا جاتا تھا ۔

  • Share this:
بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، قابل اعتراض حالت میں ملے تین لڑکے اور چار لڑکیاں ، گرفتار
پولیس افسر کے مطابق لڑکیاں چنڈی گڑھ ، دہلی اور پنجاب سے لائی جاتی تھیں اور یہاں پر ناجائز طور پر سیکس ریکیٹ چلایا جاتا تھا ۔

کروکشیتر کے صدر تھانہ علاقہ میں پولیس نے کرائے کے ایک مکان میں چل رہے بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش کیا ہے ۔ پولیس نے یہاں سے چار لڑکیوں اور تین لڑکوں کو قابل اعتراض حالت میں گرفتار کیا ہے ۔ کروکشیتر کے سیکٹر تین میں ایک کرایہ کے مکان میں یہ سیکس ریکیٹ چل رہا تھا ۔ پولیس کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ اس مکان میں گندا کام کیا جارہا ہے ۔ خاتون پولیس کی ٹیم نے وہاں پر چھاپہ مارا تو اس دھندے کا انکشاف ہوا ۔


پپلی تھانہ انچارج جگدیش چندر کے مطابق خفیہ اطلاع کی بنیاد پر پولیس نے ٹیم تشکیل دے کر ایک مکان پر دبش دی ، جس میں چار لڑکیاں اور تین لڑکے مشتبہ حالت میں ملے ۔ پولیس نے سبھی ملزمین کو گرفتار کرکے معاملہ کی جانچ شروع کردی ہے ۔ پولیس افسر جگدیش چندر کا کہنا ہے کہ ان سبھی ملزمین کو گرفتار کرلیا گیا ہے اور قانون کے مطابق معاملہ درج کرکے عدالت میں پیش کیا جائے گا ۔


علامتی تصویر
علامتی تصویر


پولیس افسر کے مطابق لڑکیاں چنڈی گڑھ ، دہلی اور پنجاب سے لائی جاتی تھیں اور یہاں پر ناجائز طور پر سیکس ریکیٹ چلایا جاتا تھا ۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ جس مکان میں یہ گندا دھندہ چل رہا تھا ، اس کو کرایہ پر لیا گیا تھا ۔

یہ بھی پڑھیں : سیکس ریکیٹ کی اطلاع پر پہنچی پولیس تو چھت سے کودنے لگیں لڑکیاں ، ایک کی موت ، تین گرفتار
First published: Feb 11, 2020 06:38 PM IST