خاتون کی موت کے بعد اہل خانہ نے دوپہر میں کی تدفین ، شام میں قبر کھود کر پولیس نے نکالی لاش ، جانیں کیا ہے معاملہ

خاتون کی موت کیسے ہوئی ، اس سلسلہ میں اہل خانہ تک کو صحیح معلومات نہیں ہے ۔ لیکن پولیس اب لاش کو قبر سے باہر نکال کر اس کا پوسٹ مارٹم کروا رہی ہے ۔

Sep 10, 2019 10:23 AM IST | Updated on: Sep 10, 2019 10:23 AM IST
خاتون کی موت کے بعد اہل خانہ نے دوپہر میں کی تدفین ، شام میں قبر کھود کر پولیس نے نکالی لاش ، جانیں کیا ہے معاملہ

خاتون کی موت کے بعد اہل خانہ نے دوپہر میں کی تدفین، شام میں قبر کھود کر پولیس نے نکالی لاش

ہریانہ میں یمنا نگر کے بلاس پور گاوں کے دھنورا میں ایک خاتون کی موت کے بعد اس کے اہل خانہ نے لاش کو دفنا دیا ، لیکن اس وقت سبھی لوگ حیران رہ گئے جب پولیس شام ہوتے ہی قبر کھودنے کیلئے پولیس اہلکار وہاں پہنچ گئے ۔ حالانکہ خاتون کی موت کیسے ہوئی ، اس سلسلہ میں اہل خانہ تک کو صحیح معلومات نہیں ہے ۔ لیکن پولیس اب لاش کو قبر سے باہر نکال کر اس کا پوسٹ مارٹم کروا رہی ہے ۔

بتادیں کہ یمنا نگر کے قصبہ بلاس پور کے گاوں دھنورا کی رہنے والی سلمی کی دوسری شادی دھنورا کے باشندہ گلاب الدین سے ہوئی تھی ۔ حالانکہ ان دنوں گلاب الدین اپنی بیوی سے الگ ہی رہ رہا تھا اور بیوی اپنی بیٹی اور داماد کے ساتھ رہ رہی تھی ، لیکن دوپہر کو سلمی کی موت کی اطلاع ملتے ہی کنبہ کے لوگ پہنچے اور سلمی کو قبرستان میں لے جا کر دفنا دیا ۔

Loading...

موت کے بعد اہل خانہ نے گھر آئے رشتہ داروں کو کھانا کھلا کر واپس بھیجا ہی تھا کہ تھانہ بلاس پور کی پولیس ایس ڈی ایم کو لے کر قبرستان پہنچ گئی اور کنبہ کے لوگوں کو رنجیت پور پولیس چوکی میں بلا کر قبر کو کھودنے کی ہدایت دی ۔ قبر کھودنے کو لے کر کنبہ کے لوگوں نے پہلے تو اعتراض کیا ، لیکن پولیس کے دباو کے بعد رات کو ہی قبر کی کھدائی کا فیصلہ کیا گیا ۔

پولیس نے گاوں کے معزز افراد کے سامنے سلمی کی قبر کھدوائی اور پھر لاش کو اپنے قبضہ میں لے لیا ۔ پولیس نے جائے واقعہ پر فورنسک ٹیم کو بھی بلا لیا اور لاش کی جانچ کرنے کے بعد اس کو پوسٹ مارٹم کیلئے سول اسپتال جگادھری بھیج دیا ۔

پولیس کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ گلاب الدین کی اہلیہ کا قتل کیا گیا ہے ، لیکن جب پولیس نے پوچھ گچھ کی تو پہلے اس معاملہ میں سلمی کی موت ہارٹ اٹیک سے بتائی گئی اور بعد میں کسی نے بتایا کہ سلمی نے پھانسی لگا لی تھی جبکہ کسی انجان شخص نے پولیس کو فون کر کے سلمی کے قتل کی بات کہی تھی ۔

Loading...