ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

حسین جہاں کو ملی آبروریزی اور جان سے مارنے کی دھمکی، پولیس نے درج کیا معاملہ

حسین جہاں نے اس پورے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوٸے حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے اس طرح کی دھمکیوں پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوٸے اس معاملے میں پولیس میں شکایت درج کرائی ہے۔

  • Share this:
حسین جہاں کو ملی آبروریزی اور جان سے مارنے کی دھمکی، پولیس نے درج کیا معاملہ
ہندوستانی کرکٹر محمد شمی کی اہلیہ حسین جہاں کو ملی جان سے مارنے کی دھمکی

کولکاتا: ہندوستانی کرکٹر محمد شمی کی اہلیہ حسین جہاں ہمیشہ اپنے بیانات کو لے کر سرخیوں میں رہی ہیں۔ ہھر چاہے ان کا بیان اپنی شادی شدہ زندگی کو لے کر ہو یا ان کے شوہر کے ساتھ چل رہے تنازعہ کو لے کر۔ حسین جہاں نے اپنے بیانات پر ہمیشہ سرخیاں بٹوری ہیں۔ اب وہ ایودھیا میں رام مندر بھومی پوجا کو لے کر سرخیوں میں ہیں۔ حسین جہاں کے مطابق، انہوں نے سوشل میڈیا پر بھومی پوجا کی حمایت کی تھی اور وزیر اعظم کو مبارکباد دی تھی، لیکن ان کا یہ بیان کچھ لوگوں کو اتنا ناگوارگزرا کہ انہوں نے حسین جہاں کو تنقید کا نشانہ بنانا شروع کردیا۔ اس ٹوٸٹ کے بعد انہیں جان سے مارنے کی دھمکی دی جارہی ہیں جبکہ کچھ لوگوں نے عصمت دری کا بھی خوف دلایا ہے۔


حسین جہاں نے اس پورے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوٸے حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے اس طرح کی دھمکیوں پر ناراضگی کا اظہار کرتے ہوٸے اس معاملے میں پولیس میں شکایت درج کراٸی ہے۔ آج کولکاتا پولیس ہیڈ کوارٹر لال بازار میں حسین جہاں کو بلایا گیا اور ان کی شکایت درج کی گٸی۔ پولیس ہیڈ کوارٹر میں حسین جہاں سے پوچھ گچھ کے بعد انہیں دی جارہی دھمکیوں کی جانچ شروع کردی گٸی ہے۔


 حسین جہاں نے اس پورے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوٸے حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔

حسین جہاں نے اس پورے واقعے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوٸے حکومت سے مدد کی اپیل کی ہے۔


لال بازار پولیس ہیڈ کوارٹر کے ساٸبر سیل نے تمام تفصیلات لیتے ہوٸے تحقیقات شروع کی ہے۔ حسین جہاں نے کہا کہ وہ اس طرح کی دھمکیوں سے گھبراتی نہیں ہیں، لیکن انہیں باہر نکلنے میں ڈراور خوف کا سامنا ہے۔ حسین جہاں نے کہا کہ مغربی بنگال میں گرچہ وہ محفوظ ہیں، لیکن وہ یوپی بھی جاتی رہتی ہیں۔ ایسے میں اس طرح کی دھمکیوں کے بعد یوپی میں وہ اپنی حفاظت کو لے کر پریشان ہیں۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 11, 2020 11:59 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading