உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    گیانواپی کیس میں آج سے سماعت، مسلم فریق کیس کے میرٹ پرردے گا دلائل، ہندو فریق نے کاشی وشوناتھ کے کئے درشن

    Youtube Video

    سماعت سے پہلے ہندو فریق نے بھگوان کاشی وشوناتھ کے فرشن کئے۔ ان کے ساتھ وکیل وشنو شنکر جین بھی تھے۔ مسلم فریق اپنے دلائل جاری رکھے گا۔

    • Share this:
      وارانسی میں گیانواپی مسجد-شرنگار  گوری مندر تنازعہ پر پیر کو دوپہر 2 بجے سماعت ہوگی۔ کیس کی میرٹ پر سماعت ڈسٹرکٹ جج ڈاکٹر اجے کمار وشویش کی عدالت میں ہونی ہے۔ مسلم فریق اپنے دلائل پیش کرے گا۔ عدالت دلائل سننے کے بعد فیصلہ کرے گی کہ کیس قابل سماعت ہے یا نہیں۔ اس کے علاوہ ماا شرنگر گوری کی پوجا اور احاطے میں دیوی دیوتاؤں کی حفاظت کے حوالے سے بھی پہلو پیش کیے جائیں گے۔

      سماعت سے پہلے ہندو فریق نے بھگوان کاشی وشوناتھ کے فرشن کئے۔ ان کے ساتھ وکیل وشنو شنکر جین بھی تھے۔ مسلم فریق اپنے دلائل جاری رکھے گا۔ ان کے مطابق یہ کیس قابل سماعت نہیں ہے، لیکن ہم نے کہا ہے کہ یہ قابل سماعت ہے۔ ہمارا وہاں عبادت کا مطالبہ شرعی طور پر جائز ہے۔

      مسلم فریق اپنی بحث کو آگے بڑھائے گا۔

      انجمن انتظاریہ مسجد کمیٹی کا دعویٰ ہے کہ گیانواپی کیمپس places of worship act 1991 لاگو ہوگا۔ یعنی ملک کی آزادی کے دن مذہبی مقام کی جو حالت تھی وہ جوں کی توں رہے گی۔ ہندو فریق کی خواتین کا دعویٰ ہے کہ places of worship act 1991 گیانواپی میں لاگو نہیں ہوگا۔ وہیں ملک کی آزادی کے بعد سال 1991 تک ماں شرنگر گوری کی پوجا کی جاتی تھی۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: