ہماچل پردیش میں بارش سے 24 گھنٹے میں 18 لوگوں کی موت

ہماچل پردیش کے مختلف حصوں میں گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران شدید بارش کی وجہ سے 18لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ یہ اطلاع وزیراعلی جے رام ٹھاکر نے آج دی۔

Aug 18, 2019 08:44 PM IST | Updated on: Aug 18, 2019 08:46 PM IST
ہماچل پردیش میں بارش سے 24 گھنٹے میں 18 لوگوں کی موت

ہماچل پردیش میں بارش سے 24 گھنٹے میں 18 لوگوں کی موت: فائل فوٹو۔

 ہماچل پردیش کے مختلف حصوں میں گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران شدید بارش کی وجہ سے 18لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔ یہ اطلاع وزیراعلی جے رام ٹھاکر نے آج دی۔ انہوں نے بتایا کہ آٹھ لوگوں کی موت شملہ ضلع میں ہوئی ہے۔ راجدھانی میں آر ٹی او کے نزدیک ایک کنبہ کی دو بہنوں سمیت باپ کی موت ہوگئی جبکہ دیگر آٹھ لوگ زخمی ہوئے ہیں۔

میڈیا سے بات چیت کے دوران وزیراعلی نے کہا کہ ریاست میں گزشتہ دو دنوں سے شدید بارش ہونے کی وجہ سے جگہ جگہ پر زمینی تودے گرنے، فلیش فلڈ اور درختوں کے گرنے کی اطلاع ملی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چمبا، کلو، سرمور اور سولن ضلع میں دو دو لوگوں نے اپنی جان گنوائی۔ اس کے علاوہ بلاسپور اور لاہول۔اسپتی ضلع میں گزشتہ 24گھنٹوں سے ہورہی شدید بارش کی وجہ سے ایک اور شخص کی موت ہوئی ہے۔

 ٹھاکر نے بتایا کہ انہوں نے ریاست کے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو صورتحال پر گہری نظر رکھنے اور مقامی و سیاحوں کی حفاظت یقینی بنانے کی ہدایات دی ہیں۔ انہوں نے سیاحوں سے ندیوں سے دور رہنے کی درخواست کی ہے کیونکہ فلیش فلڈ اور شدید بار ش کی وجہ سے پانی کی سطح بڑھنے کا اندیشہ رہتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس برس بارش کے موسم کے دوران ریاست کو تقریباََ 490کروڑ روپے کا نقصا ن ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز اور آج صبح بے وقت برفباری کی وجہ سے ضلع لاہول۔اسپتی میں فصلوں کو بڑے پیمانہ پر نقصان پہنچا ہے۔

Loading...

Loading...