உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کرناٹک بٹ کوائن کیس کی تحقیقات پر ایف بی آئی ٹیم کا ذکر کیوں؟ CBI نے پیش کی وضاحت

    مرکزی تفتیشی ایجنسی (CBI) کے عہدے داروں کی فائل فوٹو

    مرکزی تفتیشی ایجنسی (CBI) کے عہدے داروں کی فائل فوٹو

    ایک ٹویٹ میں چتر پور سے کانگریس کے ایم ایل اے پرینک کھرگے نے کہا تھا کہ انہیں یقین ہے کہ ایف بی آئی بلین ڈالر کے بٹ کوائن گھوٹالے کی تحقیقات کے لیے دہلی میں ہے۔ جیسا کہ میں نے پہلے کہا کہ اگر ریاست اس معاملے کی سنجیدگی سے تحقیقات کرتی ہے، تو بی جے پی کی حقیقت سامنے آئے گی۔

    • Share this:
      مرکزی تفتیشی ایجنسی (CBI) نے اتوار کے روز اس بات کی تردید کی کہ یو ایس فیڈرل بیورو آف انویسٹی گیشن (US Federal Bureau of Investigation) کی ایک ٹیم ہندوستان میں مبینہ بٹ کوائن کیس کی تحقیقات کے ضمن میں کرناٹک پولس کی طرف سے تفتیش کے لیے آئی تھی اور ان رپورٹوں کو ’قیاس آرائی‘ اور بغیر کسی بنیاد کے قرار دیا ہے۔

      ایک بیان میں مرکزی تفتیشی ایجنسی نے کہا کہ ایف بی آئی نے اس معاملے کی تحقیقات کے لیے کوئی ٹیم ہندوستان نہیں بھیجی ہے اور نہ ہی امریکی تحقیقاتی ایجنسی کی طرف سے اس معاملے کی تحقیقات کے لیے سی بی آئی سے کوئی درخواست کی گئی ہے۔ اس کے مطابق ہندوستان میں مجاز اتھارٹی کی طرف سے کسی بھی قسم کی تحقیقات کی اجازت کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ مرکزی تفتیشی بیورو کے ترجمان آر سی جوشی نے کہا کہ ہندوستان میں انٹرپول کے لیے قومی مرکزی بیورو کے طور پر سی بی آئی ایف بی آئی سمیت بین الاقوامی قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کے ساتھ قریبی رابطہ رکھتی ہے۔

      یہ بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب کانگریس نے جمعہ کے روز پوچھا کہ کیا ایف بی آئی ایک مبینہ "بٹ کوائن گھوٹالے" کی تحقیقات کے لیے ہندوستان میں ہے جسے پارٹی نے گزشتہ سال کرناٹک میں بی جے پی حکومت پر چھپانے کا الزام لگایا تھا۔ بعد ازاں سینئر حکام نے مزید کہا کہ کیس کی تحقیقات کے لیے ایف بی آئی ٹیم کی موجودگی کا دعویٰ کرنے والے بیانات اور رپورٹس قیاس آرائی پر مبنی، بغیر کسی بنیاد کے ہیں اور بد نیتی کے ساتھ جاری کی گئی ہیں۔

      یہ بھی پڑھئے : کیا رمضان کے مہینہ میں میک اپ کرنے سے ٹوٹ جاتا ہے روزہ؟


      ایک ٹویٹ میں چتر پور سے کانگریس کے ایم ایل اے پرینک کھرگے نے کہا تھا کہ انہیں یقین ہے کہ ایف بی آئی بلین ڈالر کے بٹ کوائن گھوٹالے کی تحقیقات کے لیے دہلی میں ہے۔ جیسا کہ میں نے پہلے کہا کہ اگر ریاست اس معاملے کی سنجیدگی سے تحقیقات کرتی ہے، تو بی جے پی کی حقیقت سامنے آئے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ ’کانگریس کے ترجمان رندیپ سنگھ سورجے والا نے بھی ٹویٹ کیا تھا۔ اسی لیے #BitcoinScam کی پرتیں آخرکار بے نقاب ہو رہی ہیں! ‘

      یہ بھی پڑھئے : روزہ کے دوران ہو سر میں درد تو ان طریقوں سے پائیں آرام


      اس نے مبینہ گھوٹالے سے متعلق کئی سوالات پوچھے تھے، بشمول کیا ایف بی آئی کرناٹک بی جے پی حکومت کے تحت ہندوستان کے سب سے بڑے بٹ کوائن اسکام کور اپ کی تحقیقات کے لیے ہندوستان میں تھی؟ انہوں نے حکومت سے تفتیش اور مشتبہ افراد بشمول سیاسی لوگوں کی تفصیلات جاری کرنے کو بھی کہا تھا۔

      کانگریس پر مبینہ بٹ کوائن اسکام کے معاملے پر سیاست کرنے کا الزام لگاتے ہوئے چیف منسٹر بسواراج بومئی نے پچھلے سال اپوزیشن پارٹی سے کہا تھا کہ وہ دستاویزات، اگر کوئی ہیں تو، تحقیقاتی ایجنسیوں کو دیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: