اپنا ضلع منتخب کریں۔

    ہماچل پردیش میں اقتدار بدلے گا یا رواج؟ اسمبلی الیکشن کے لیے ووٹنگ جاری، میدان میں ہیں 412 امیدوار

    Youtube Video

    ہماچل پردیش کا اب تک کا ٹرینڈ رہا ہے کہ ہر الیکشن میں حکومت بدلتی ہے۔ یعنی برسراقتدار پارٹی کو ہار کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس لیے اس مرتبہ الیکشن انچارج میں بی جے پی نے نیا نعرہ دیا ہے۔ راج نہیں، رواج بدلیں گے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Himachal Pradesh, India
    • Share this:
      ہماچل پردیش کی سبھی 68 اسمبلی سیٹوں پر آج ہفتہ کو ووٹ ڈالے جارہے ہیں۔ ریاست بھر میں 7884 رائے دہی مراکز بنائے گئے ہیں۔ یہاں صبح 8 بجے سے شام 5 ب جے تک ووٹ ڈالے جائیں گے۔ ریاست میں مجموعی طور پر 412 امیدواروں کی قسمت ای وی ایم میں قید ہوگی۔ اسمبلی الیکشن کے نتائج 8 دسمبر کو آئیں گے۔ ریاست میں 5592828 ووٹرس ہیں۔ ان میں سے 28,54,945 مرد اور 27,37,845 خواتین ووٹرس ہیں۔ اس کے علاوہ مجموعی طور پر 38 تھرڈ جینڈر بھی ووٹ ڈالیں گے۔ ریاست میں 2017 کے اسمبلی الیکشن میں 75.57 فیصد ووٹنگ ہوئی تھی۔ یہ 2012 کے اسمبلی الیکشن میں 73.5 فیصد ووٹنگ سے زیادہ تھا۔

      ہماچل پردیش کا اب تک کا ٹرینڈ رہا ہے کہ ہر الیکشن میں حکومت بدلتی ہے۔ یعنی برسراقتدار پارٹی کو ہار کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس لیے اس مرتبہ الیکشن انچارج میں بی جے پی نے نیا نعرہ دیا ہے۔ راج نہیں، رواج بدلیں گے۔ یعنی حکومت نہیں، بلکہ پرانی روایت کو بدلیں گے۔ فی الحال، ریاست میں بی جے پی کی حکومت ہے اور جئے رام ٹھاکر وزیراعلیٰ ہیں۔ اس سے پہلے 2012 میں کانگریس کی حکومت بنی تھی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      چین نے ایل اے سی پر مستقل کنٹرول حاصل کرنے کے لیے منصوبہ بند طریقہ سے کی تھی دراندازی

      یہ بھی پڑھیں:
      ’7بجے کے بعد یوپی میں لگتا ہے ڈر‘،خواتین کے تحفظ پر پرینکا نے کیا پولیس اہلکار سے سوال

      ووٹنگ کو لے کر خاص تیاریاں
      اس مرتبہ الیکشن کمیشن نے ووٹنگ کو لے کر خاص تیاریاں کی ہیں اور ووٹنگ فیصد بڑھانے پر زور دیا ہے۔ ہماچل پردیش میں 80 سال سے زیادہ عمر کے 121409 ووٹرس ہیں۔ الیکشن کمیشن نے تین اسسٹنگ پولنگ اسٹیشن بھی بنائے ہیں۔ مجموعی طور پر 7،884 ووٹنگ سینٹرس پر ووٹنگ ہوگی۔ ان میں سے 789 بوتھ حساس ہیں۔ الیکشن کمیشن نے 15256 فٹ کی اونچائی پر لاہول اسپیتی ضلع کے اسپیتی علاقے میں تاشی گنگ، کاجا میں سب سے اونا بوتھ قائم کیا ہے۔ یہاں 52 ووٹرس ووٹ ڈالیں گے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: