உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ہماچل پردیش میں الیکشن سے قبل کانگریس کو بڑا جھٹکا، آنند شرما کا اسٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین عہدے سے استعفیٰ

    آنند شرما ہماچل پردیش اسٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین عہدے سے مستعفی

    آنند شرما ہماچل پردیش اسٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین عہدے سے مستعفی

    سابق مرکزی وزیر آنند شرما نے ہماچل پردیش کانگریس کی اسٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ سونیا گاندھی کو لکھے خط میں کانگریس لیڈر آنند شرما نے کہا کہ وہ اپنے عزت نفس کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کر سکتے ہیں۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Himachal Pradesh, India
    • Share this:
      نئی دہلی: سابق مرکزی وزیر آنند شرما نے ہماچل پردیش کانگریس کی اسٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کی ایک خبر میں کہا گیا ہے کہ سونیا گاندھی کو لکھے خط میں کانگریس لیڈر آنند شرما نے کہا کہ وہ اپنے عزت نفس کے معاملے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کر سکتے ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ اہم میٹنگوں میں نہیں بلائے جانے کے سبب آنند شرما کانگریس میں خود کو نظر انداز اور الگ تھلگ محسوس کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وہ کانگریس امیدواروں کے لئے تشہیر میں حصہ لیں گے۔

      آنند شرما کی بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا سے ملاقات کی خبریں بھی میڈیا میں آئی تھیں، جس کے بعد انہوں نے کہا تھا کہ ان کو کسی بھی سیاسی جماعت کے لیڈران کے ساتھ چھپ کر ملنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ کبھی گاندھی فیملی کے بے حد قریبی رہے آنند شرما کافی وقت سے پارٹی ہائی کمان کے مخالف بن گئے تھے۔ آنند شرما پارٹی کے ان 23 غیر مطمئن لیڈران میں بھی شامل تھے، جنہوں نے سونیا گاندھی کو ایک خط لکھا تھا۔ اس کے بعد سے وہ مسلسل کانگریس کی تنقید کرنے والے بیان دے رہے تھے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      گجرات الیکشن سے پہلے ایکشن میں BJP، دو قدآور وزرا سے CM بھوپیندر پٹیل نے واپس لئے اہم محکمے

      کہا جاتا ہے کہ لمبے وقت سے راجیہ سبھا کے رکن رہے آنند شرما چاہتے تھے کہ غلام نبی آزاد کی مدت ختم ہونے کے بعد راجیہ سبھا میں اپوزیشن کا لیڈر بنایا جائے۔ جبکہ راہل گاندھی اور سونیا گاندھی نے ان کے بجائے ملیکا ارجن کھڑگے کو اپوزیشن لیڈر کے لئے منتخب کیا۔ مانا جاتا ہے کہ اس کے بعد سے ہی آنند شرما کی ناخوشی پارٹی اعلیٰ کمان سے بڑھنے لگی۔

      آنند شرما کے بارے میں یہ مشہور رہا ہے کہ وہ کبھی زمینی لیڈر نہیں رہے۔ منموہن سنگھ حکومت میں آنند شرما مرکزی وزیر تجارت اور صنعت رہے۔ آنند شرما نے پہلے بھی پارٹی کے کئی فیصلوں پر سوال اٹھائے تھے۔ خاص طور پر مغربی بنگال میں کچھ سیاسی جماعتوں کے ساتھ کانگریس کے اتحاد پر سوال اٹھانے کے بعد آنند شرما کا کئی لیڈران سے تنازعہ ہوا تھا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: